Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ کاسیاہ ترین باب ہے جوناقابل فراموش ہے۔الطاف حسین


  سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ کاسیاہ ترین باب ہے جوناقابل فراموش ہے۔الطاف حسین
 Posted on: 5/26/2021

 سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ کاسیاہ ترین باب ہے جوناقابل فراموش ہے۔الطاف حسین
  26، 27 مئی 1990ء کوبینظیربھٹوکی سفاک حکومت نے حیدرآباد کے پکاقلعہ میں
 ریاستی ظلم وبربریت کی بدترین تاریخ رقم کی 
 مہاجرنوجوانوں کی گرفتاریوں کے نام پر حیدرآبادکے پکاقلعہ پر پورے سندھ کی پولیس کے ذریعے لشکرکشی کی گئی
 پکاقلعہ کی مہاجرماؤںبہنوں نے سروںپر قرآن مجید رکھ کراس ظلم کو بندکرنے کی دہائیاں
 دیں تو ان پر بیدریغ گولیاںبرسائی گئیں
 دوروزتک جاری رہنے والے ا س ظلم وبربریت کے نتیجے میںپچاس سے زائد مہاجر
مائیںبہنیں، نوجوان، بزرگ اوربچے شہید اور درجنوں زخمی ہوئے 
 اس ظالمانہ آپریشن کے دوران شہیدوں کی تدفین تک کی اجازت نہیں دی گئی جس کی
 وجہ سے شہیدوںکو پکا قلعہ کے احاطے میں ہی سپردخاک کرناپڑا
سانحہ پکاقلعہ کے شہیدوںکودل کی گہرائیوں سے خراج عقیدت پیش کرتاہوں۔ الطاف حسین 

لندن  …  26  مئی 2021 ئ
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے کہاہے کہ سانحہ پکاقلعہ 26، 27 مئی 1990ء پاکستان کی تاریخ کاسیاہ ترین باب ہے جس ر وز حیدرآباد کے پکاقلعہ میں ریاستی ظلم وبربریت کی بدترین تاریخ رقم کی گئی ۔ سانحہ پکا قلعہ کے شہداء کی 31ویں برسی کے موقع پر اپنے ایک بیان میں جناب الطاف حسین نے کہاکہ 26مئی 1990ء کواس وقت کی بینظیربھٹوحکومت نے مہاجرنوجوانوں کی گرفتاریوں کے نام پر حیدرآبادکے پکاقلعہ پر پورے سندھ کی پولیس کے ذریعے لشکرکشی کی ،پکاقلعہ میں ایک ایک گھر گھرمیں گھس کرلوٹ مار کی گئی ، مہاجر ماؤں بہنوں کی بے حرمتی کی گئی، علاقے کی مسجدوں تک کی بے حرمتی کی گئی ۔پورے علاقے کاپانی، بجلی اورگیس بندکر کے دو روزتک محاصرہ کیاگیا، جب اس ظلم وبربریت کے خلاف پکاقلعہ کی مہاجرماؤںبہنوں نے پرامن احتجاج کیا اورسروںپر قرآن مجید رکھ کراس ظلم کو بندکرنے کی دہائیاں دیں توظالم اورسفاک پولیس نے ان پر بیدریغ گولیاںبرسائیں ،مہاجرماؤںبہنوں کے سروں کے نشانے لے لے کرانہیں گولیاں ماری گئیں ۔ دوروزتک جاری رہنے والے ا س ظلم وبربریت کے نتیجے میںپچاس سے زائد مہاجرمائیںبہنیں، نوجوان، بزرگ اوربچے شہید ہوئے اور درجنوں زخمی ہوئے ۔سفاک پولیس اہلکاروں کی وحشیانہ فائرنگ سے مہاجرمائیںبہنیں ہی نہیں بلکہ وہ اپنے سروں پرجوقرآن مجید لئے ہوئے تھیں وہ تک شہید ہوئے۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی سفاک حکومت نے اس ظالمانہ آپریشن کے دوران شہیدوں کی تدفین کیلئے جنازوںکوقبرستان تک لیجانے کی اجازت نہ دی جس کی وجہ سے سانحہ کے شہیدوںکو پکا قلعہ کے احاطے میں ہی سپردخاک کرناپڑا۔ ان شہیدوں کی قبریں آج بھی پکا قلعہ میں موجود ہیں۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ بینظیر بھٹوکی سفاک حکومت کی جانب سے حیدرآبادکے پکاقلعہ میں 26  اور 27مئی 1990ء کوڈھایاجانے والاحکومتی ظلم وبربریت کایہ واقعہ پاکستان کی تاریخ کاایک ایسا سیاہ ترین باب ہے جسے فراموش نہیں کیاجاسکتا۔ جناب الطاف حسین نے سانحہ پکاقلعہ کے تمام شہیدوںکوخراج عقید ت پیش کرتے ہوئے کہاکہ پکاقلعہ کی غیورماؤںبہنوں، بزرگوں، نوجوانوں اور بچوں نے ریاستی مظالم کے خلاف سینہ سپر ہوکر اور اپنی جانوں کانذرانہ پیش کرکے دنیاکوبتادیاکہ حیدرآباد ظالموں کے خلاف ڈٹ جانے والوںکاشہرہے۔ انہوںنے دعاکی کہ اللہ تعالیٰ سانحہ پکاقلعہ کے تمام شہیدوں کو جنت الفردوس میں جگہ دے، ان کے درجات بلند کرے اور ان کے لواحقین کوصبرجمیل عطافرمائے۔ 
٭٭٭٭٭



1/25/2022 11:32:36 PM