Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

دنیا کی بدلتی ہوئی صورتحال اس بات کاواضح اشارہ دے رہی ہے کہ پاکستان کی مظلوم قوموں کوغلامی سے آزادی نصیب ہوگی۔ الطاف حسین


دنیا کی بدلتی ہوئی صورتحال اس بات کاواضح اشارہ دے رہی ہے کہ پاکستان کی مظلوم قوموں کوغلامی سے آزادی نصیب ہوگی۔ الطاف حسین
 Posted on: 9/17/2021
دنیا کی بدلتی ہوئی صورتحال اس بات کاواضح اشارہ دے رہی ہے کہ پاکستان کی مظلوم قوموں کوغلامی سے آزادی نصیب ہوگی۔ الطاف حسین 
 میری 68 ویں سالگرہ آزادی کی نوید دے رہی ہے کہ اب بلوچستان ، پختونخوا، گلگت  بلتستان اورہزاروال آزاد ہوں گے اور پاکستان کامقبوضہ کشمیر بھی آزادہوگا۔  سندھ بھی آزاد ہوگا جہاں اردو بولنے والے سندھی اورسندھی بولنے والے سندھی ، سندھ کی ترقی کے لئے مل جل کرکام کریںگے
 آزادی کے بعد کسی کے ساتھ رنگ ، نسل، زبان، جنس یامذہب کی بنیادپر کوئی زیادتی نہیں کی جائے گی
سندھی بولنے والے سندھیوںاوراردو بولنے والے سندھیوں (مہاجروں)کاوطن اب سندھ ہے،ان کاجینامرنا اب سندھ سے وابستہ ہے
 مہاجراورسندھی آپس میں ایک دوسرے سے بیر رکھنے کے بجائے متحد ہو جائیںاور سندھ کی آزادی کے لئے ملکر جدوجہد کریں
 میرادل گواہی دیتاہے کہ انشاء اللہ اب سندھی بولنے والے اوراردوبولنے والے اب آپس میں کبھی نہیں لڑیںگے اوراسٹیبشلمنٹ کی لڑاؤ اورقبضہ کرو کی سازش کوکسی بھی قیمت پر کامیاب نہیں ہونے دیںگے
  قسم کھاتاہوں کہ جب تک میرے جسم میں سانس باقی ہے ،میں شہیدوںکے لہوکورائیگاںجانے نہیں دوں گا اورآخری سانس تک جدوجہد کرتا رہوںگا 
 آزادی کے بعد غیرجانبدارلوگوںپر مشتمل '' ٹرتھ اینڈ ری کنسیلی ایشن کمیشن ''  قائم کیاجائے گا
یہ دیکھاجائے گاکہ کون لوگ ریاستی جبر اورمجبوری کی بناء پر تحریک کوچھوڑ گئے تھے اورکون دشمنوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے تھے
 سالگرہ کی مبارکباد دینے کیلئے جمع ہونے والے پاکستان اوراوورسیزیونٹوںکے کارکنوں سے فون پرخطاب

لندن  …  17 ستمبر 2021ئ
ایم کیوایم کے بانی وقائدجناب الطاف حسین نے کہاہے کہ دنیا کی بدلتی ہوئی صورتحال اس بات کاواضح اشارہ دے رہی ہے کہ پاکستان کی مظلوم قوموں کوغلامی سے آزادی نصیب ہوگی ، ہمارے شہید وں کالہو رنگ لائے گااورہمارے شہیدوں کے لواحقین کوان کی قربانیوں کا پھل ضرورملے گا، آزادی کے بعد کسی کے ساتھ رنگ ، نسل، زبان، جنس یامذہب کی بنیادپر کوئی زیادتی نہیں کی جائے گی۔ انہوں نے ان خیالات کااظہار جمعرات کی شب پاکستان اور اوورسیزیونٹوںکے کارکنوں سے فون پرخطاب کرتے ہوئے کیا جو انہیں ان کی 68 ویں سالگرہ کی مبارکباد پیش کرنے کے لئے جمع ہوئے تھے۔
جناب الطاف حسین نے اپنے خطاب میں کارکنان وعوام کوپیغام دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی نصابی کتابوںاورقومی دنوں کے موقع پر صرف چارقومیتو ں پنجابی ، پختون، بلوچ اورسندھی قوموں کی ثقافت دکھائی جاتی تھی اوریہ بتایا جاتاتھاکہ پاکستان میں صرف چار قومیتیں آباد ہیں۔ انہوں نے کہاکہ میں تحریک کے ابتدائی ایام میں بھی یہی بتاتاتھاکہ پاکستان میں چارنہیں پانچ قومیتیںہیں، جن کی اپنی اپنی مادری زبانیں ہیں، بلوچ عوام کی مادری زبان بلوچی ہے، سندھی عوام کی مادری زبان سندھی ہے، پنجابی عوام کی مادری زبان پنجابی ہے، پختونخواہ کے عوام کے اکثریت کی مادری زبان پشتو ہے جبکہ جو لوگ ہندوستان کی تقسیم کے وقت ہندوستان سے ہجرت کرکے آئے تھے ان کی مادری زبان اردو ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہا کہ 23مارچ 1940ء کی قرارداد لاہورمیں ''پاکستان '' کالفظ شامل نہیں تھابلکہ آزاد اورخودمختارریاستوںکے الفاظ شامل تھے۔ اب یہ نیچر کایاقدرت کا فیصلہ تھاکہ سندھ کے قدیم باشندوں کے ساتھ اردوزبان بولنے والے بھی سندھ میں آکرنہ صرف آباد ہوںگے بلکہ سندھیوں کی طرح سندھ کے مستقل باشندے بن جائیںگے۔ لہٰذا اب سندھی بولنے والے سندھیوںاوراردو بولنے والے سندھیوں (مہاجروں)کاوطن سندھ ہے،ان کاجینامرنا اب سندھ سے وابستہ ہے ، چاہے اردو بولنے والے سندھی ہوںیاسندھی بولنے والے سندھی ہوں، وہ جوکچھ کماتے ہیں وہ سندھ دھرتی پر ہی خرچ کرتے ہیں، وہ اپنی کمائی جانے والی رقم کے منی آرڈر کسی دوسرے صوبے میں نہیں بھیجتے ہیں، وہ مرنے کے بعد اسی سندھ دھرتی میں دفن ہوتے ہیںاوران کی میتیں تابوتوں میں بند کرکے دوسرے صوبوںمیں نہیں لے جائی جاتیں ہیں۔ 
 جناب الطاف حسین نے کہاکہ دنیا کی بدلتی ہوئی صورتحال اس بات کاواضح اشارہ دے رہی ہے کہ پاکستان کے مظلوم قوموں کوغلامی سے آزادی نصیب ہوگی ، شہیدوں کالہو رنگ لائے گااور شہیدوں کے لواحقین کوان کی قربانیوںکاپھل ضرور ملے گا، آزادی کے بعد کسی کے ساتھ رنگ ، نسل، زبان، جنس یامذہب کی بنیادپر کوئی زیادتی نہیں کی جائے گی۔ انہوںنے کہاکہ میری 68 ویں سالگرہ آزادی کی نوید دے رہی ہے کہ اب بلوچستان ، پختونخوا، گلگت  بلتستان اورہزاروال آزاد ہوں گے اور پاکستان کامقبوضہ کشمیر(Paksitan Occupied Kashmir ) بھی آزادہوگا۔ اسی طرح سندھ بھی آزاددیش یعنی سندھودیش ہوگا جہاں اردو بولنے والے سندھی اورسندھی بولنے والے سندھی ، سندھ کے دونوں مستقل باشندے سندھودیش کی ترقی کے لئے اتحاد کے ساتھ مل جل کرکام کریںگے۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ مہاجروںاورسندھیوںکو چاہیے کہ وہ فوج اورآئی ایس آئی کی سازشوںکوسمجھیں ، منفی پروپیگنڈوں میں نہ آئیں اورآپس میں ایک دوسرے سے بیر رکھنے کے بجائے متحد ہو جائیں اور سندھ کی آزادی کے لئے ملکر جدوجہد کریں۔انہوں نے کہاکہ اگر سندھی اورمہاجرمتحد نہ ہوئے تویہ دونوں کے لئے تباہ کن ہوگا۔انہوںنے کہاکہ میں نے جس طرح شیعہ سنی فساد ختم کرایا تھا ، اسی طرح میرادل گواہی دیتاہے کہ انشاء اللہ اب سندھی بولنے والے اوراردوبولنے والے اب آپس میں کبھی نہیں لڑیںگے اوراسٹیبشلمنٹ کی لڑاؤ اورقبضہ کرو کی سازش کوکسی بھی قیمت پر کامیاب نہیں ہونے دیںگے۔ 
جناب الطاف حسین نے کارکنوںکومخاطب کرتے ہوئے کہا''آپ اپنے قائدپریقین رکھیں، آپ کا قائدظالموںکے آگے سرینڈرنہیں کرے گاخواہ اس کے لئے اسے تنہا ہی کیوں نہ لڑنا پڑے ''۔ انہوںنے شہیدوںکومخاطب کرتے ہوئے کہا '' الطاف حسین آج اپنی 68 ویں سالگرہ پر قسم کھاتاہے کہ جب تک الطاف حسین کے جسم میں سانس باقی ہے وہ تمہارے لہوکورائیگاںجانے نہیں دے گا اورآخری سانس تک جدوجہد کرتا رہے گا '' ۔ 
 جناب الطاف حسین نے کہاکہ جولوگ ہم پر تعصب کاالزام لگاتے ہیں دراصل وہ خود متعصب ہیں۔انہوں نے کہاکہ حضور اکرمۖ  کی حدیث ہے کہ'' اپنی قوم سے محبت کرناتعصب نہیں بلکہ یہ جائز ہے ۔ تعصب یہ ہے کہ تمہاری قوم کسی پر ظلم کرے اور تم اس ظلم میں اپنی قوم کے ظالموںکاساتھ دو '' ۔ انہوںنے کہاکہ جیسے کہ آج پنجاب سے تعلق رکھنے والے افراد دوسری قوموں پرہونے والے مظالم کی حمایت کررہے ہیں ۔
جناب الطاف حسین نے کہاکہ دنیاجانتی ہے کہ ہماری تحریک ملک کی سب سے منظم اورلوہے کی طرح مضبوط تحریک ہے لیکن کچھ لوگوں نے اسٹیبلشمنٹ کے ہاتھوں اپنے ظرف وضمیر کاسودا کیاتووہ اس قدرگمراہ ہوگئے کہ انہوں نے تحریک اورنظریہ کا سوداکرکے اس کو کمزورکرنے کی اسٹیبلشمنٹ کی تیارکردہ سازش میںشریک کار بنے ۔ انہوں نے کہاکہ آزادی کے بعدساؤتھ افریقہ کی طرزپر غیرجانبدارلوگوںپر 
مشتمل ایک '' ٹرتھ اینڈ ری کنسیلی ایشن کمیشن ''  (Turth and Reconciliation Commission)قائم کیاجائے گااوریہ دیکھاجائے گاکہ تحریک کے کونسے لوگ ریاستی جبر اورمجبوری کی بناء پر تحریک کوچھوڑ گئے تھے اور کون تحریک کونقصان پہنچانے کیلئے دشمنوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ دشمنی کے اس عمل میں جوبھی شامل ہوا، خواہ وہ اردو بولنے والے سندھی ہوں یاسندھی بولنے والے سندھی ہوں، ان کابلاامتیاز احتساب ہوگا۔  
جناب الطاف حسین نے نئی نسل کوتحریکی جدوجہد سے آگاہ کرنے کیلئے '' ہفتہ آگاہی '' منانے اورایم کیوایم کی جانب سے 1980ء کی دہائی میںمنعقد کئے گئے  '' مفت بازار ''  اور '' ہفتہ صفائی ''  کوسوشل میڈیا پربھرپوراندازمیں پیش کرنے اور اس سلسلے میں سوشل میڈیا پر جاری ہیش ٹیگ کاکاؤنٹ ایک لاکھ 10ہزار سے زیادہ ہونے پر تمام کارکنوںکوشاباش پیش کی ۔ جناب الطاف حسین نے خطاب کے اختتام 
پردعاکی کہ اللہ تعالیٰ ہماری جدوجہد کوقبول فرمائے اورہمیں ظالموںسے آزادی عطا فرمائے، اللہ تعالیٰ شہداء کے درجات بلند فرمائے، اسیروں کی جلد رہائی عطافرمائے اورلاپتہ ساتھیوں کی جلد بازیابی کے اسباب پیدافرمائے ۔آمین ، ثمہ آمین۔  
٭٭٭٭٭








10/22/2021 12:40:28 AM