Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سرکاری ایجنسیوں ،رینجرزاور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چند متعصب افسران یہ پروپیگنڈےکررہے ہیں کہ ایم کیوایم کے کچھ لوگ فرقہ وارانہ قتل وغارتگری میں ملوث ہیں۔الطاف حسین


سرکاری ایجنسیوں ،رینجرزاور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چند متعصب افسران یہ پروپیگنڈےکررہے ہیں کہ ایم کیوایم کے کچھ لوگ فرقہ وارانہ قتل وغارتگری میں ملوث ہیں۔الطاف حسین
 Posted on: 9/11/2014
سرکاری ایجنسیوں ،رینجرزاور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چند متعصب افسران یہ پروپیگنڈےکررہے ہیں کہ ایم کیوایم کے کچھ لوگ فرقہ وارانہ قتل وغارتگری میں ملوث ہیں۔الطاف حسین
اگر ایم کیوایم کاکوئی ایک کارکن یارہنماان جرائم میں ملوث ہواور آئی ایس آئی، ایم آئی ، آئی بی یاکسی بھی ایجنسی کے پاس اسکے ناقابل تردیدٹھوس ثبوت وشواہد موجودہوں تو ایم کیوایم کے اس فردکو کسی بھی چوک پر سرعام پھانسی دیدی جائے
اگرایم کیوایم پرفرقہ وارانہ قتل وغارتگری کے جھوٹے الزامات ثابت نہ ہوں تو شرمناک الزام لگانے والوں کولٹکایاجائے
میری پوری زندگی شیعہ سنی بھائی چارے اور اتحاد بین المسلمین کیلئے گزرگئی،مجھے یہ جان کر بہت افسوس ہواہے کہ ایم کیوایم پر فرقہ وارانہ قتل وغارتگری کے شرمناک الزامات لگائے جارہے ہیں اور اصل مجرموں کو بچانے کی کوشش کی جاتی ہے
واحدایم کیوایم ہے جوشیعہ سنی بھائی چارے اوراتحادبین المسلمین کیلئے کوششیں کررہی ہے ،اگر سازشیں کرکے اسے کمزورکیاجائے گا تو پھراس قتل وغارتگری کے خلاف آوازاٹھانے والاکون ہوگا؟ 
فوج اورعسکری اداروں نے جو جہادی گروپ بنائے وہی عناصر آج نہ صرف معصوم شہریوں کو ماررہے ہیں بلکہ مسلح افواج کے افسروں جوانوں کوماررہے ہیں اورمسلح افواج پر حملے کررہے ہیں
وقت کاتقاضہ ہے کہ مسلح افواج کے اندرموجود انتہاپسند عناصر کے خلاف بے رحمانہ کارروائی کی جائے
ایسے تمام مدر سے جہاں نوجوانوں کو دہشت گرد ی کی ترغیب دی جاتی ہے ان سے آہنی ہاتھوں سے نمٹاجائے
ممتازعالم دین علامہ عباس کمیلی سے ان کے بیٹے علی اکبرکمیلی کی شہادت پرفون پر تعزیت
لندن۔۔۔11 ستمبر2014ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائدجناب الطاف حسین نے پاکستان کی آرمی، نیوی اورایئرفورس کے چیفس،آئی ایس آئی سمیت تمام عسکری اداروں کے سربراہان، سول اورملٹری بیوروکریسی اوراسٹیبلشمنٹ کے تمام اعلیٰ حکام کومخاطب کرتے ہوئے کہاہے کہ ایم کیوایم کی پوری جدوجہد شیعہ سنی بھائی چارے اوراتحادبین المسلمین کیلئے گزری ہے لیکن یہ امرافسوسناک ہے کہ سرکاری ایجنسیوں ،رینجرزاور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چند متعصب افسران شیعہ اورسنی عوام میں یہ پروپیگنڈے کررہے ہیں کہ ایم کیوایم کے کچھ لوگ فرقہ وارانہ قتل وغارتگری میں ملوث ہیں، اگر ایم کیوایم کاکوئی ایک کارکن یارہنماان جرائم میں ملوث ہو اور آئی ایس آئی، ایم آئی ، آئی بی یاکسی بھی ایجنسی کے پاس اسکے ناقابل تردید ٹھوس ثبوت وشواہد موجودہوں تو ایم کیوایم کے اس فردکو کسی بھی چوک پر سرعام پھانسی دیدی جائے اوراگریہ جھوٹے الزامات ثابت نہ ہوں توایسے جھوٹے الزام لگانے والوں کولٹکایاجائے۔ انہوں نے یہ بات ممتازعالم دین اورجعفریہ الائنس کے سربراہ علامہ عباس کمیلی سے ان کے بیٹے علی اکبرکمیلی کی شہادت پرفون پر تعزیت کرتے ہوئے کہی۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ میں مسلح افواج اورتمام عسکری اداروں کے سربراہان کے علم میںیہ بات لاناچاہتاہوں کہ امریکہ اورروس کی سردجنگ کے دوران فوج اورعسکری اداروں کے ارباب اختیار نے جس طرح آنکھ بند کرکے پروکسیز کیلئے جہادی گروپ بنائے ، انہیں اسلحہ دیا،فسادکی ٹریننگ دی ، پناہ دی وہی عناصر آج نہ صرف ملک کے معصوم شہریوں کو ماررہے ہیں بلکہ وہی عناصر نیوی کے افسران اورجوانوں کوماررہے ہیں، وہی عناصر فضائیہ کے افسران اور جوانوں کوماررہے ہیں اوروہی عناصر فوج کے افسران اورجوانوں کو مار رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ پاک فوج کے صاحب ایمان افسران اورجوان تودہشت گردوں کے خلاف ضرب عضب کے نام سے جنگ لڑرہے ہیں اور اپنی جانیں دے رہے ہیں دوسری طرف مسلح افواج کے اداروں میں موجود انتہاپسند عناصر ان اداروں کودیمک کی طرح چاٹ رہے ہیں،انہی عناصر کی جانب سے کبھی جی ایچ کیو پر حملہ ہوا، کبھی فضائیہ کے کامرہ بیس پر حملہ ہوا، نیوی کے مہران بیس پر حملہ ہوا، آئی ایس آئی کے دفاتر اورمسلح افواج کے دیگر دفاتر پر حملہ کیاگیا، حال ہی میں نیوی کے ڈاکیارڈ پر بھی حملہ کیاگیا،ان کے حملوں کے نتیجے میں بڑی تعدادمیں افسران اور جوان شہیدہوچکے ہیں۔جناب الطا ف حسین نے آرمی، نیوی اورایئرفورس کے چیفس،آئی ایس آئی سمیت تمام عسکری اداروں کے سربراہان، سول اورملٹری بیوروکریسی اوراسٹیبلشمنٹ کے تمام اعلیٰ حکام کومخاطب کرتے ہوئے کہاکہ یہ وقت کاتقاضہ ہے کہ اب قانون نافذ کرنے والے اداروں اورمسلح افواج کی صفوں میں موجود ایسے عناصر کے خلاف بے رحمانہ کارروائی کی جائے اور اس کے ساتھ ساتھ فوج کے ایماندارشیعہ اورسنی افسران پر مشتمل گروپ بناکر تمام شیعہ اور سنی مدرسوں اور مساجد میں بھیجاجائے اورچیک کیاجائے کہ وہاں کیاتعلیم دی جاتی ہے اور کیسے تعلیم دی جاتی ہے اور ایسے تمام مدر سے جہاں نوجوانوں کی برین واشنگ کرکے انہیں دہشت گرد ی کی ترغیب دی جاتی ہے ان سے آہنی ہاتھوں سے نمٹاجائے اورکسی کے ساتھ کوئی رعایت نہ کی جائے۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ عوام اچھی طرح جانتے ہیں کہ کراچی میں فرقہ وارانہ قتل وغارتگری میں کونسی کالعدم تنظیموں کے عناصر ملوث ہیں لیکن یہ امرانتہائی افسوسناک ہے کہ سرکاری ایجنسیوں ،رینجرزاور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے چند متعصب افسران شیعہ اورسنی عوام میں یہ انتہائی شرمناک اورجھوٹے پروپیگنڈے کررہے ہیں کہ ایم کیوایم کے کچھ لوگ ان جرائم میں ملوث ہیں۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ میں چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف ،نیوی اور بحریہ کے چیفس اور ڈی جی آئی ایس آئی جنرل ظہیر الاسلام اورتمام عسکری اداروں کے سربراہان سے خدا اوررسولؐ کی قسم کھاکرکہتاہوں کہ اگرایم کیوایم کا کوئی ایک کارکن یا رہنما ان جرائم میں ملوث ہو اوراسکے بار ے میں آئی ایس آئی، ایم آئی ، آئی بی یاکسی بھی ایجنسی کے پاس ناقابل تردیدٹھوس ثبوت وشواہد موجود ہوں تو ایم کیوایم کے اس فرد کو کراچی ، لاہور یا ملک کے کسی بھی حصہ میں چوک پر سرعام پھانسی دیدی جائے اوراس کی لاش کودفنانے کے بجائے نشان عبرت بنادیا جائے اور اگر یہ الزامات ثابت نہ ہوں تو الزام لگانے والوں کولٹکایاجائے۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ میری پوری زندگی شیعہ سنی بھائی چارے اور اتحاد بین المسلمین کیلئے گزرگئی، میں جب پاکستان میں تھاتواپنی جان ہتھیلی پر رکھ کرشیعہ سنی تصادم رکوانے کیلئے میدان میں اترجاتا تھا اور کئی سالوں سے جلاوطنی میں رہتے ہوئے بھی فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور اتحادبین المسلمین کیلئے رات دن کوشاں ہوں مگرمجھے یہ جان کر بہت افسوس ہواہے کہ آج بھی یہ متعصب لوگ ایم کیوایم کے خلاف سازشیں کررہے ہیں اور اس پر فرقہ وارانہ قتل وغارتگری کے شرمناک الزامات لگارہے ہیں۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ جب شیعہ سنی علماء کو اچھی طرح معلوم ہے کہ کونسی کالعدم تنظیموں کے لوگ فرقہ وارانہ قتل کرر ہے ہیں اورکن کن مدرسوں میں کیسی کیسی تعلیم دی جارہی ہے تو کیا سرکاری ایجنسیوں کواس بات کاعلم نہیں ہے؟ اس کے باوجود ایم کیو ایم پر بیہودہ الزامات لگائے جارہے ہیں اوراس طرح اصل مجرموں کو بچانے کی کوشش کی جاتی ہے ۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ الزامات لگانے والے اورپروپیگنڈے کرنے والے اگرمردکے بچے ہیں توان الزامات کے ناقابل تردید ٹھوس ثبوت پیش کریں ورنہ یہ بیہودہ اورجھوٹے الزامات لگانااور پروپیگنڈے کرنا بندکردیں۔ انہوں نے کہاکہ اگرمعصوم لوگوں کے خلاف بہتان تراشی کایہ عمل بندنہیں کیاجائے گا تو جو عناصر یہ شرمناک عمل کررہے ہیں ان پر اللہ تعالیٰ کاعذاب ناز ل ہوگا۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ شیعہ اورسنی علماء ان شرمناک پروپیگنڈوں میں ہرگز نہ آئیں اوراس بات کوسمجھیں کہ واحدایم کیوایم ہے جوشیعہ سنی بھائی چارے اوراتحادبین المسلمین کیلئے کوششیں کررہی ہے ،اگراس پر ہی شرمناک الزامات لگا کر اسے بدنام کیا جائے گا، سازشیں کرکے اسے کمزورکیاجائے گا تو پھر کیارہ جائے گا اوراس قتل وغارتگری کے خلاف آوازاٹھانے والاکون ہوگا؟ جناب الطاف حسین نے علامہ عباس کمیلی کے صاحبزادے علی اکبرکمیلی کی شہادت پران کے تمام اہل خانہ سے دلی تعزیت کی اوردعاکی کہ اللہ تعالیٰ علی اکبر کمیلی شہید کوجنت الفردوس میں جگہ دے، تمام لواحقین کوصبرجمیل عطاکرے اور پاکستان کو سازشوں سے محفوظ رکھے۔ 


12/7/2016 12:24:38 PM