Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

پولیس اور دیگراداروں نے ایم کیوایم کے مزید 11 کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکرلیا


پولیس اور دیگراداروں نے ایم کیوایم کے مزید 11 کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکرلیا
 Posted on: 4/16/2014
پولیس اور دیگراداروں نے ایم کیوایم کے مزید 11 کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکرلیا
گزشتہ 48گھنٹوں میں ایم کیوایم کے تین کارکنوں کوشہیداورکئی کارکنوں کو زخمی کیاجاچکاہے،رابطہ کمیٹی
دہشت گردوں اور قاتلوں کے بجائے الٹا ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکرکے لاپتہ کیاجارہا ہے، رابطہ کمیٹی
سندھ حکومت کے بعض وزراء کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن کی کامیابی کے دعوے کرکے شہریوں کے زخموں پر نمک پاشی کررہے ہیں
بے گناہ ذمہ داران ، کارکنان اور ہمدردوں کی غیرقانونی گرفتاریوں کا سلسلہ فی الفور بند کرایا جائے
کراچی ۔۔۔16، اپریل2014ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے کراچی کے مختلف علاقوں میں پولیس اور قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کی جانب سے ایم کیوایم کے ذمہ داروں ،کارکنان اورہمدردوں کے گھروں پر غیرقانونی چھاپوں اور گرفتاریوں کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ڈبل کیبن گاڑیوں میں سوار ڈیتھ اسکواڈ کے سادہ لباس میں ملبوس اہلکاروں کی جانب سے ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنان کی گرفتاریوں کا سلسلہ بدستورجاری ہے اور گزشتہ کئی دنوں سے گرفتارکیے جائے والے کارکنان کے بارے میں آج کے دن تک کچھ بتایا نہیں جارہا کہ انہیں کیوں اورکس نے گرفتارکیا ہے اورگرفتارکرکے کہاں رکھا گیا ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ گزشتہ رات سے آج تک ایم کیوایم کے مزید 11 کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکیا گیا ہے۔رابطہ کمیٹی نے مزید کہاکہ مورخہ 15 ، اپریل کو پولیس اور دیگرقانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے ایم کیوایم اسکیم 33 سیکٹر، یونٹ احسن آباد کے کارکنان عبدالرزاق ولد محمد یعقوب ، محمدرمیز ولد محمد امین، محمد نذیرولد غلام یاسین، ایم کیوایم لانڈھی سیکٹریونٹ 87 کے کارکن کلیم الدین ولد علیم الدین کوگرفتار کرلیا جبکہ آج 16 اپریل کو سرکاری اہلکاروں نے غیرقانونی چھاپے مارکر ایم کیوایم لیاقت آباد سیکٹریونٹ 158 کے کارکن محمد عادل ولد محمد ظفر،یونٹ 159 کے کارکن سید محمد یاورولد سید عبدالغفار، اورنگی ٹاؤن سیکٹریونٹ 118-A کے کارکن شہباز ولد عبدالمجید، سرجانی ٹاؤن سیکٹرکے سرکل انچارج جاوید قریشی، ایم کیوایم بلدیہ ٹاؤن سیکٹر یونٹ 116 کے ہمدرد محمد شکیل، یونٹ 117 کے کارکن محمد رفیق اوراسی یونٹ کے ہمدرد عمران ولد ابو بھائی کو گرفتارکرلیا۔ 
رابطہ کمیٹی نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، دہشت گردی اور دیگرجرائم کے واقعات مسلسل رونما ہورہے ہیں ، گزشتہ 48گھنٹوں میں ایم کیوایم کے تین کارکنوں کوشہیداورکئی کارکنوں کو زخمی کیاجاچکاہے،اردوبولنے والے ڈاکٹروں ، پروفیسروں اور وکیلوں کو قتل کیاجارہا ہے اورشہریوں کی جان ومال کو کسی بھی قسم کاتحفظ حاصل نہیں ہے لیکن سندھ حکومت کے بعض وزراء کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن کی کامیابی کے دعوے کرکے شہریوں کے زخموں پر نمک پاشی کررہے ہیں۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ قتل وغارتگری ، لوٹ مار اور اغواء کی وارداتوں میں ملوث جرائم پیشہ عناصر کے بجائے الٹا ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنان وہمدردوں کو گرفتارکرکے لاپتہ کیاجارہا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔
رابطہ کمیٹی نے کہاکہ وزیراعظم میاں نواز شریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان ، گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد اور وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ سے مطالبہ کیاکہ ایم کیوایم کے بے گناہ ذمہ داران ، کارکنان اور ہمدردوں کی غیرقانونی گرفتاریوں کا سنجیدگی سے نوٹس لیا جائے، غیرقانونی چھاپوں اور گرفتاریوں کا سلسلہ فی الفور بند کرایا جائے اور تمام گرفتارشدگان کی بازیابی کیلئے عملی اقدامات کیے جائیں ۔

12/2/2016 8:30:03 PM