Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

ایم کیوایم کے قائدالطاف حسین نے صوفی کانفرنس میں ممتاز صوفی شعر اء حضرت سلطان باہوؒ اور بابا بلھے شاہ ؒ کے کلام میں سے اشعاربھی سنائے


ایم کیوایم کے قائدالطاف حسین نے صوفی کانفرنس میں ممتاز صوفی شعر اء حضرت سلطان باہوؒ اور بابا بلھے شاہ ؒ کے کلام میں سے اشعاربھی سنائے
 Posted on: 3/9/2014 1
لاہور۔۔۔9 مارچ 2014ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائدجناب الطاف حسین نے لاہورمیں ایم کیوایم کے زیراہتمام ہونے والی کانفرنس میں ممتاز صوفی شعر اء حضرت سلطان باہوؒ اور بابا بلھے شاہ ؒ کے کلام میں سے چنداشعاربھی سنائے ۔انہوں نے حضرت سلطان باہوؒ کے یہ اشعارپیش کئے 
الف اللہ چنبھے دی بُوٹی ۔۔۔ مرشد من وِچ لائی ہُو
نفی اثبات دا پانی ملیا ۔۔۔ ہر رگے ہر جائی ہُو
اندر بوٹی مُشک مچایا ۔۔۔ جاں پُھلّن تے آئی ہُو
جیوے مُرشد کامل باہُوؔ ۔۔۔ جئیں اے بُوٹی لائی ہُو
اس کاترجمہ یہ ہے،
’’میرے مرشد نے میرے دل میں اللہ کا نام حق او رسچ کی پہچان چنبیلی کے پودے کیطرح لگائی ہے اس آواز حق کی پہچان نے میری رگ رگ میں سرایت کرلیا ہے اور اُ س حق سچ کی پہچان نے میرے اندر ایک ہیجان بپا کردیا ہے جو باہر نکل نکل آرہا ہے۔ میرا مرشد جیوے جس نے میرے اندر اس حق اور سچ کو پہچاننے کا جذبہ جگایا‘‘۔
جناب الطاف حسین نے بابا بلھے شاہ ؒ کے یہ اشعارپیش کئے،
پڑھ پڑھ علم تے فاضل ہویا
تے کدی اپنے آپ نوں پڑھیاں ای ناں
پَج پَج وڑناں ایں مندر مسیتے 
تے کدی اپنے مَن وچ وڑیاں ای ناں
لَڑناں ایں روز شیطاناں دے نال
تے کدی نفس اپنے نال لڑیاں ای ناں
بلّھے شاہ آسمان اوڈّ دے پَھڑ دا ایں
تے جیڑا گھر بیٹھا اُونوں پَھڑیا ای ناں
اس کاترجمہ یہ ہے،
’’علم کی کتابیں پڑھ پڑھ کے لوگ عالم فاضل بن جاتے ہیں لیکن کبھی خو د کو نہیں پڑتے ۔ بھاگ بھاگ کر مسجدوں اور مندروں میں جاتے ہیں لیکن اپنے من میں جھانکتے بھی نہیں ہیں کہ اس میں کتنی خودغرضیاں چھپی ہوئی ہیں ۔ روز برائیوں کے خلاف اعلانِ جہاد اور وعظ کرتے ہیں لیکن اپنے اندر چھپی خواہشوں کے خلاف کبھی نہیں لڑتے ۔ بلھیّ شاہ آسمان پر اڑتے ہوئے پکڑتے ہو لیکن جو آپ کے اندر چھپا ہوا ہے اس کو تو کبھی نہیں پکڑتے‘‘ ۔
جناب الطاف حسین نے بابا بلھے شاہ ؒ کایہ شعربھی پیش کیا،
پڑھ پڑھ کتاباں علم دیاں ، تُوں نام رکھ لیا قاضی
ہتھ وِچ پَھڑ کے تلوار ، تے نام رکھ لیا غازی
مکے ، مدینے گھوم آیا ، تے نام رکھ لیا حاجی
او بُلھیا حاصل کی ، کیتا؟ جے توں رب ناں کیتا راضی
شعرکاترجمہ یہ ہے ،
’’علم کی کتابیں پڑھ پڑھ کے تم نے اپنا نام قاضی رکھ لیا ہے۔ اور ہاتھ میں تلوار پکڑ کر تم نے غازی نام رکھ لیا ہے۔جب مکیّ مدّینے سے ہوکر آتے ہو تو اپنا نام حاجی رکھ لیتے ہو۔ بلھّے شاہ اِ س سب کا کیا فائدہ اگر تم خدا کو ہی راضی نہیں کر سکے‘‘ ۔

12/4/2016 4:15:07 AM