Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

ماڑی پور گینگ وار کے سفاک دہشت گردوں کے ظلم و ستم کیخلاف سول سوسائٹی کے زیر اہتمام کراچی پریس کلب پر احتجاجی مظاہرہ


ماڑی پور گینگ وار کے سفاک دہشت گردوں کے ظلم و ستم کیخلاف سول سوسائٹی کے زیر اہتمام کراچی پریس کلب پر احتجاجی مظاہرہ
 Posted on: 1/2/2014 1
ماڑی پور گینگ وار کے سفاک دہشت گردوں کے ظلم و ستم کیخلاف سول سوسائٹی کے زیر اہتمام کراچی پریس کلب پر احتجاجی مظاہرہ
احتجاجی مظاہرے میں ماڑی پور میں گینگ وار کے ہاتھوں شہید کئے جانے والے خاندان کی بچ جانے والی دو بچیوں اور دیگر لواحقین کی شرکت
احتجاجی مظاہرے کے شرکاء نے اپنے ہاتھوں میں شرمناک واقعہ کے خلاف پلے کارڈ اور بینرز اٹھا رکھے تھے 
پلے کارڈز پر سفاک قاتلوں کی گرفتاری، انصاف کی فراہمی اور اس واقعہ پر بے حسی کے مظاہرے کے خلاف نعرے اور مطالبات جلی حروف میں تحریر تھے 
مظاہرین کا ممنون حسین، نواز شریف، چوہدری نثار علی سے خواتین کی عصمت دری اور قتل میں ملوث گینگ وار دہشت گردوں کی گرفتار ی کا مطالبہ 
کراچی ۔۔۔2جنوری 2014ء 
ماڑی پور کے علاقے میں گینگ وار کے سفاک دہشت گردوں کے ہاتھوں ایک ہی خان کی دو خواتین سے اجتماعی عصمت دری سمیت 34سالہ خاتون شازیہ، ان کے شوہر مظفر بیگ ، 2کمسن و معصوم بچوں ،14سالہ عمران اور10سالہ عبد الصمد کوبیدردی سے گولیاں مار کر شہید کرنے کے خلاف سول سوسائٹی کے زیراہتمام کراچی پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ احتجاجی مظاہرے میں شہید کئے جانے والے خاندان کی بچ جانے والی دو بچیوں اوردیگر لواحقین نے بھی شرکت کی ۔ احتجاجی مظاہرے کے شرکاء نے اپنے ہاتھوں میں شرمناک واقعہ کے خلاف پلے کارڈ اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر سفاک قاتلوں کی گرفتاری، انصاف کی فراہمی اور اس واقعہ پر بے حسی کے مظاہرے کے خلاف نعرے اور مطالبات جلی حروف میں تحریر تھے اس موقع پر احتجاجی مظاہرے کے شرکاء \"We Want Justice\"’’ظلم کے ضابطے ہم نہیں مانتے ، ’’سفاک قاتلوں کی فی الفور گرفتاری کیلئے پرجوش نعرے بھی لگا رہے تھے ۔احتجاجی مظاہرے میں ایم کیوایم کے ارکان قومی اسمبلی علی راشد ، محترمہ ثمن جعفری ، ارکان سندھ اسمبلی سمیتا سید ، ارم فاروقی ، کامران اختر بھی شریک ہوئے ۔ مظاہرے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے حق پرست ارکان قومی و صوبائی اسمبلی نے کہا ہے کہ کراچی میں گینگ وار کے دہشت گردوں نے سفاکیت ، درندگی کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور واقعہ میں 17سالہ حاملہ منزہ کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد اس کے پیٹ میں گولی مار دی جس سے ان کا حمل ضائع ہوگیا اور وہ اب بھی زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا ہیں جبکہ مظاہرے میں شریک اس بد نصیب خاندان کی بچ جانے والی بچیاں اور لواحقین ابھی تک انصاف کے منتظر ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ خواتین سے عصمت دری اور اس کے بعد دیگر افراد اور بچیوں کو بیدردی سے گولیاں مارنے کے واقعہ میں ملوث دہشتگرد آزاد گھوم رہے ہیں ، یہ ایسا واقعہ ہے جس نے ہر پاکستانی کے سر شرم سے جھکا دیئے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ میڈیا بھی اس المناک واقعہ کو اجاگر کرے اور حکمرانوں اور انصاف کی فراہمی کے اداروں کو اس واقعہ پر بے حسی کا مظاہرہ فی الفور بند کرنا چاہئے اور اس واقعہ میں مفرور سفاک دہشت گردوں یاسین بلوچ ، عادل تو گرفتار ہیں لیکن 3ابھی تک مفرور ہیں اورجوقانون افذ کرنے والے اداروں کے سامنے آزاد گھوم رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف سیاسی کارکنوں کو گرفتار کیاجارہا ہے اور جرائم پیشہ درندہ صفت دہشت گرد قانون کی گرفت سے محفوظ ہیں ۔ حق پرست ارکان قومی وصوبائی اسمبلی نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے اپیل کی کہ ماڑی پور میں ایک خاندان کی 2خواتین سے اجتماعی زیادتی ، 34سالہ خاتون شازیہ ، ان کے شوہر مظفر بیگ اور 2کمسن بچوں 14سالہ عمران اور 10سالہ عبد الصمد کو بیدردی سے قتل کرنے کے واقعہ کا سوموٹو نوٹس لیں اور شاہ زیب کیس کی طرح اس واقعہ میں ملوث دہشت گردوں کو پھانسی کی سزا سنائی جائے ۔ حق پرست ارکان قومی وصوبائی اسمبلی ہ نے صدر مملکت ممنون حسین ، وزیراعظم نواز شریف ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے مطالبہ کیا کہ ماڑی پور میں ایک ہی خاندان کے 4افراد سے دردنگی کے واقعہ میں ملوث گینگ وار کے مفرو ر دہشت گردوں کو فی الفور گرفتار کیاجائے ، اس واقعہ پر بے حسی کا مظاہرہ فی الفور بند کیاجائے اور متاثرہ بچوں اور ان کے لواحقین کو انصاف کی فراہمی کیلئے ہر سطح پراقدامات بروئے کار لائے جائیں ۔ 




















12/10/2016 6:43:28 AM