Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

معاشرتی اقدار کے فروغ ،انصاف ومساوات کے نظام کے قیام اور تمام طبقوں میں اتحادویکجہتی کیلئے انسانی حقوق کااحترام لازمی امر ہے ۔الطاف حسین


معاشرتی اقدار کے فروغ ،انصاف ومساوات کے نظام کے قیام اور تمام طبقوں میں اتحادویکجہتی کیلئے انسانی حقوق کااحترام لازمی امر ہے ۔الطاف حسین
 Posted on: 12/10/2013
معاشرتی اقدار کے فروغ ،انصاف ومساوات کے نظام کے قیام اور تمام طبقوں میں اتحادویکجہتی کیلئے انسانی حقوق کااحترام لازمی امر ہے ۔الطاف حسین
دنیا کہاں سے کہاں پہنچ گئی ہے لیکن ہمارے ملک میں آج بھی مختلف شکلوں میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں
پاکستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورذیوں کی سب سے بڑی اورسنگین مثال سیاسی کارکنوں اور دیگرشہریوں کوگرفتارکرکے لاپتہ کیا جانا ہے 
شہریوں کو گرفتار کرکے لاپتہ کردینا اور عدالتوں میں پیش نہ کرنا انہیں حصول انصاف کے بنیادی حق سے محروم کرناہے
کاروکاری،غیرت کے نام پر قتل، ونی،سوماراوردیگرفرسودہ رسومات کے ذریعے بھی انسانی حقوق کی خلاف ورذیوں کاعمل کیاجارہاہے
جب تک ان معاملات کاسدباب نہیں کیاجائے گااس وقت تک پاکستان میں انسانی حقوق کی صورتحال بہترنہیں ہوسکتی۔ انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پراپنے پیغام
لندن ۔۔۔10 دسمبر2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائدجناب الطاف حسین نے کہاہے کہ معاشرتی اقدار کے فروغ ،انصاف ومساوات کے نظام کے قیام اور معاشرے کے تمام طبقوں میں اتحادویکجہتی کیلئے انسانی حقوق کااحترام لازمی امر ہے ۔ انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پراپنے پیغام میں انہوں نے کہاکہ آج اکیسویں صدی میں دنیاترقی کے میدان میں کہاں سے کہاں پہنچ گئی ہے لیکن یہ افسوس کی بات ہے کہ ہمارے ملک میں جمہوری دورہونے کے باوجود آج بھی مختلف شکلوں میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں جس کی سب سے بڑی اورسنگین مثال سیاسی کارکنوں اور دیگرشہریوں کوگرفتارکرکے لاپتہ کیا جانا ہے ۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ شہریوں کو گرفتار کرکے لاپتہ کردینا اور عدالتوں میں پیش نہ کرنا انہیں حصول انصاف کے بنیادی حق سے محروم کرناہے۔ دوسری جانب ملک میں رائج فرسودہ جاگیردارانہ نظام کے باعث کاروکاری،غیرت کے نام پر قتل، ونی،سوماراوردیگرفرسودہ رسومات کے ذریعے انسانی حقوق کی خلاف ورذیوں کاعمل کیاجارہاہے ۔انہوں نے کہاکہ جب تک ان معاملات کاسدباب نہیں کیاجائے گااس وقت تک پاکستان میں انسانی حقوق کی صورتحال بہتر نہیں ہوسکتی۔



12/10/2016 4:49:00 AM