Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سرکاری اہلکاروں کی جانب سے دوران حراست ایم کیوایم کے سابق یونٹ انچاج دلشاد احمد کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے پر حق پرست اراکین قومی اسمبلی کا اظہار مذمت


سرکاری اہلکاروں کی جانب سے دوران حراست ایم کیوایم کے سابق یونٹ انچاج دلشاد احمد کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے پر حق پرست اراکین قومی اسمبلی کا اظہار مذمت
 Posted on: 10/26/2013
سرکاری اہلکاروں کی جانب سے دوران حراست ایم کیوایم کے سابق یونٹ انچاج دلشاد احمد کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے پر حق پرست اراکین قومی اسمبلی کا اظہار مذمت 
جرائم پیشہ عناصر کو چھوڑ کر معصوم و بے گناہ کارکنان کی بے بنیاد الزامات میں گرفتاری اور دوران حراست تشدد کے واقعات ٹارگٹڈ آپریشن کی شفافیت پر سوالیہ نشان ہیں
واضح ہوگیا کہ جرائم پیشہ عناصر، بھتہ مافیا، بوری بند گلہ کٹی تشدد زدہ لاشیں پھینکنے والوں سمیت قتل و غارتگری کی سنگین وارداتوں میں ملوث دہشت گردوں کو گرفتار کرنے کے بجائے گھناؤنی سازش کے تحت کراچی آپریشن کا رخ ایم کیوایم کی طرف موڑا جا رہا ہے 
صدر، وزیر اعظم، وفاقی وزیر داخلہ ،گورنر سندھ اور وزیر اعلیٰ سندھ دلشاد احمد خان پر دوران حراست بہیمانہ تشدد کا سخت نوٹس لیں، حق پرست اراکین قومی اسمبلی کا مطالبہ
کراچی:۔۔26؍ اکتوبر 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے حق پرست اراکین قومی اسمبلی نے قانون نافذکرنیوالے اداروں کے اہلکاروں کی جانب سے ایم کیو ایم برنس روڈ سیکٹر یونٹ 23کے سابق یونٹ انچارج دلشاد احمد خان کودوران حراست انسانیت سوز تشدد کا نشانہ بنانے اورانہیں نیم مردہ حالت میں پھینکنے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن کی آڑمیں جرائم پیشہ عناصر،بھتہ مافیا،بوری بندگلہ کٹی تشددزدہ لاشیں پھینکنے والوں سمیت شہرمیں قتل وغارتگری کی سنگین وارداتوں میں ملوث دہشت گردوں کو چھوڑکر معصوم وبے گناہ افراد کی بلا جواز گرفتاریوں اور دوران حراست انسانیت سوز تشدد کانشانہ بنانے کے تیزی سے بڑھتے ہوئے واقعات نے کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن کی شفافیت پر کئی سوالات چھوڑے ہیں جن کاجواب خودآپریشن کرنیوالوں کے پاس نہیں ہے ۔انہوں نے کہاکہ ایک جانب قانون نافذکرنیوالے ادارے کے اہلکار شہر میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن کی آڑ میں ایم کیوایم کے معصوم و بے گناہ کارکنان کو گرفتار کر کے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنارہے ہیں جبکہ دوسری طرف جرائم پیشہ عناصرکی جانب سے شہرمیں قتل وغارتگری کا نہ روکنے والا سلسلہ جاری ہے بلکہ وہ ایم کیوایم کے ذمہ داران وکارکنان کوقتل و غارتگری کا نشانہ بنارہے ہیں جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم برنس روڈ سیکٹر یونٹ 23کے سابق یونٹ انچارج دلشاد احمد خان کو 23اکتوبرکی رات قریباًساڑھے نوبجے پاکستان چوک کے علاقے سے قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں نے علاقے کے لوگ کی موجودگی میں باقاعدہ گرفتار کیا تھا جس کے اہل محلہ عینی شاہد ہیں۔ انہوں نے مزید کہاکہ دلشاد احمد خان کودوروزتک انتہائی ظالمانہ اوربے رحمانہ تشددکانشانہ بناکر نیم مردہ حالت میں مورخہ 25اکتوبرکی صبح گھر والوں کودیا گیاجس کے بعددلشاد احمد خان کو فوری طورپر ان کی فیملی نے سول اسپتال منتقل کیا جہاں ابتدائی طبی امداد کے بعد انہیں ایک پرائیویٹ ہسپتال میں داخل کرادیا گیا ۔اراکین اسمبلی نے کہا کہ ڈاکٹروں کی رپورٹ کے مطابق دلشاد احمد خان کو شدید دماغی چوٹ لگی ہے جس کی وجہ سے وہ کوما میں ہیں اور ان کو مصنوعی تنفس فراہم کیا جارہا ہے جبکہ دونوں رانوں کی ہڈیاں کئی جگہوں سے ٹوٹی ہوئی ہیں اور دونوں ٹانگوں میں خون جما ہوا ہے اورجسم کے دیگر حصوں پر بھی شدید تشدد کے نشانات نمایاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ قائد تحریک جناب الطاف حسین اور ایم کیوایم نے کراچی میں امن وامان کی بحالی اورتیزی سے بگڑتی ہوئی بدامنی کی صورت کو کنٹرول کرنے کیلئے جرائم پیشہ عناصر کے خلاف آپریشن کا مطالبہ کیا تھااورآج بھی اس پرقائم ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ قانون نافذکرنیوالے ادارے کے اہلکاروں کی جانب سے معصوم شہریوں کی غیرقانونی گرفتاری اورانہیں سرکاری ٹارچرسیلوں میں لیجا کر انسانیت سوز بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنانے کے واقعات سے واضح ہوگیا ہے کہ ٹارگٹڈآپریشن جرائم پیشہ عناصر،بھتہ خوروں اورقتل وغارتگری میں ملوث دہشت گردوں کے خلاف نہیں بلکہ اب اس کا رخ ایم کیو ایم کی طرف موڑ دیا گیا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔حق پرست اراکین قومی اسمبلی نے صدر پاکستان ممنون حسین، وزیراعظم پاکستان نوازشریف ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد، وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا ہے کہ دلشاداحمدخان سمیت ایم کیوا یم کے بے گناہ کارکنان پر دوران حراست بہیمانہ تشدد کا سخت نوٹس لیاجائے اور ذمہ دار افراد کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائے۔

12/8/2016 7:57:44 PM