Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ بدترین سانحہ ہے۔ڈاکٹرندیم احسان


سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ بدترین سانحہ ہے۔ڈاکٹرندیم احسان
 Posted on: 5/26/2018

سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ بدترین سانحہ ہے۔ڈاکٹرندیم احسان
حیدرآبادمیں پیپلزپارٹی کی سفاک حکومت نے پولیس آپریشن کے نام پر بربریت کامظاہرہ کیا۔ڈاکٹرندیم احسان 
پورے علاقے میں آپریشن کے نام پر گھروں میں لوٹ مارکی گئی اورسینکڑوں بے گناہوں کوبیدریغ گولیوں کانشانہ بنایاگیا
پکاقلعہ کی مہاجرخواتین نے سروں پر قرآن مجید رکھ کر دہائیاں دیں توان مہاجر خواتین پر بھی اندھادھند گولیاں چلائی گئیں
یہ بہت بڑاواقعہ تھالیکن اس کی نہ توکوئی تحقیقات کرائی گئیں اورنہ ہی اس ظلم وبربریت میں ملوث لوگوں کوکوئی سزادی گئی
جس طرح سانحہ ماڈل ٹاؤن پر تحقیقاتی کمیشن تشکیل دیاگیااسی طرح سانحہ پکاقلعہ آپریشن پر بھی تحقیقاتی کمیشن قائم کیاجائے اورذمہ داروں کوسزادی جائے ۔ سانحہ پکاقلعہ کے شہداء کی 28ویں برسی پرکنوینر ڈاکٹرندیم احسان کا بیان


لندن ۔۔۔ 26 مئی 2018ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے کنوینر ڈاکٹرندیم احسان نے کہاہے کہ سانحہ پکاقلعہ پاکستان کی تاریخ بدترین سانحہ ہے جب سندھ کے دوسرے بڑے شہر حیدرآبادمیں پیپلزپارٹی کی سفاک حکومت نے پولیس آپریشن کے نام پر بربریت کامظاہرہ کیا۔ سانحہ پکاقلعہ کے شہداء کی 28ویں برسی کے موقع پر اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ 26 اور27 مئی 1990ء کو بینظیربھٹوکے دورحکومت میں لاڑکانہ، دادو، خیرپوراوراندرون سندھ کے دیگرشہروں سے پولیس بلائی گئی ، اس کے ساتھ ساتھ جیلوں سے ڈاکوؤوں کوبھی پولیس کی وردیاں پہناکرساتھ لایاگیا،حیدرآبادکے پکاقلعہ کامحاصرہ کیاگیااورعلاقے کی بجلی، پانی اور گیس کی سپلائی بند کی گئی اورپورے علاقے میں آپریشن کے نام پر گھروں میں لوٹ مارکی گئی اورسینکڑوں بے گناہوں کوبیدریغ گولیوں کانشانہ بنایاگیا۔ جب پکاقلعہ کی مہاجرخواتین نے اس ظالمانہ آپریشن کے خلاف سروں پر قرآن مجید رکھ کریہ دہائیاں دیں کہ یہ ظلم بند کیاجائے توحکومت کی ہدایت پر ان مہاجر خواتین پر بھی اندھادھند گولیاں چلائی گئیں جس کے نتیجے میں کئی مہاجرمائیں بہنیں اس وحشیانہ فائرنگ کے نتیجے میں بھی شہید ہوئیں۔ پیپلزپارٹی کی مہاجر دشمن حکومت نے صرف اسی پر بس نہیں کیابلکہ شہیدہونے والوں کی میتیں قبرستان لے جانے کی بھی اجازت نہیں دیں جس کی وجہ سے ان شہیدوں کوپکاقلعہ کے احاطے ہی میں سپردخاک کرناپڑا۔ ڈاکٹرندیم احسان نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی سفاک حکومت کی جانب سے کیاجانے والایہ ظالمانہ آپریشن دراصل ملک کی تاریخ کا ایک بدترین سانحہ ہے جسے فراموش نہیں کیا جاسکتا ۔انہوں نے کہاکہ یہ اتنابڑاواقعہ تھالیکن اس کی نہ توکوئی تحقیقات کرائی گئیں اورنہ ہی اس ظلم وبربریت میں ملوث پولیس وانتظامیہ اورحکومت کے لوگوں کوکوئی سزادی گئی۔ ڈاکٹرندیم احسان نے مطالبہ کیاکہ جس طرح سانحہ ماڈل ٹاؤن پر تحقیقاتی کمیشن تشکیل دیاگیااسی طرح سانحہ پکاقلعہ آپریشن پر بھی تحقیقاتی کمیشن قائم کیاجائے اورذمہ داروں کوسزادی جائے ۔ ڈاکٹرندیم احسان نے سانحہ پکاقلعہ کے شہیدوں کوخراج عقیدت پیش کیااوردعاکی کہ اللہ تعالیٰ تمام شہیدوں کی مغفرت فرمائے، انہیں جنت الفردوس میں جگہ دے اورتمام لواحقین کوصبر جمیل عطاکرے۔ 
*****


10/17/2018 6:09:25 PM