Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

رکن قومی اسمبلی سفیان یوسف کے گھرقانون نافذ کرنے والے سرکاری اہلکاروں کاغیرقانونی چھاپہ


رکن قومی اسمبلی سفیان یوسف کے گھرقانون نافذ کرنے والے سرکاری اہلکاروں کاغیرقانونی چھاپہ
 Posted on: 10/14/2017
رکن قومی اسمبلی سفیان یوسف کے گھرقانون نافذ کرنے والے سرکاری اہلکاروں کاغیرقانونی چھاپہ
سرکاری اہلکارگھرمیں آ دھے گھنٹے تک پورے گھرکی تلاشی لیتے رہے
گھر میں موجود لیپ ٹاپ، موبائیل فون اور دیگر اشیاء کی جانچ پڑتال کرتے رہے
قومی اسمبلی کے معزز رکن کی گرفتاری کیلئے غیرقانونی چھاپہ جمہوریت پسندجماعتوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے ،رابطہ کمیٹی
کراچی اورحیدرآباد میں قائد تحریک الطاف حسین کے وفادار کارکنان کے گھروں پر چھاپے مارے جارہے ہیں، رابطہ کمیٹی
جلاوطن اورروپوش رہنماؤں اورمتحرک کارکنان کے غیرسیاسی رشتہ داروں تک کو گرفتارکرکے لاپتہ کیاجارہا ہے، رابطہ کمیٹی
جبروستم کے ہتھکنڈوں سے ایم کیوایم کے ذمہ داروں اورکارکنان کوخوف زدہ نہیں کیاجاسکتا، رابطہ کمیٹی

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے آج ہفتہ کی علی الصبح ایم کیوایم کے رکن قومی اسمبلی سفیان یوسف کی رہائش گاہ واقع فیڈرل بی ایریا میں قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں کے غیرقانونی چھاپے اورتوڑپھوڑکی شدیدمذمت کی ہے ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ہفتہ کی صبح تقریباً پانچ بجے سادہ لباس میں رینجرز اور دیگرقانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکارایم کیوایم کے رکن قومی اسمبلی سفیان کی گرفتاری کیلئے فیڈرل بی ایریاکراچی میں واقع ان کے گھر پر غیر قانونی چھاپہ مارااور زبردستی گھر میں داخل ہوگئے، اس وقت گھر میں صرف خواتین موجود تھیں۔یہ سرکاری اہلکار2 ٹویٹا کرولا کاراور ویگوگاڑی میں سوار تھے۔سرکاری اہلکاروں نے غیرقانونی چھاپے کے دوران پورے گھرکی تلاشی لی ، تلاشی کے دوران گھر میں موجود خواتین کوہراساں کیا اورسفیان یوسف کے بارے میں معلوم کرتے رہے ۔رابطہ کمیٹی نے کہاکہ سرکاری اہلکارآ دھے گھنٹے تک پورے گھرکی تلاشی دوران سرکاری اہلکارگھرمیں موجود لیپ ٹاپ ، موبائیل فون اوردیگر اشیاء کی جانچ پڑتال بھی کرتے رہے ۔ 

رابطہ کمیٹی نے سفیان یوسف کے گھرپر غیرقانونی چھاپے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاکہ قومی اسمبلی کے معزز رکن کی گرفتاری کیلئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کا غیرقانونی چھاپہ جمہوریت پسندجماعتوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے ، جب متعصب سرکاری اہلکاروں کی غیرقانونی کارروائی سے قومی اسمبلی کے رکن تک کو نہیں بخشا جارہا ہے تو ایم کیوایم کے عام کارکنان کے ساتھ سرکاری اہلکاروں کے ظلم وستم کا بخوبی اندازہ لگایاجاسکتا ہے۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ حق پرستانہ جدوجہد کی پاداش میں کراچی اورحیدرآباد میں قائد تحریک جناب الطاف حسین کے وفادار کارکنان کے گھروں پر رینجرز اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے غیرقانونی چھاپے مارے جارہے ہیں،غیرقانونی چھاپوں کے دوران خواتین کو ہراساں کیا جارہا ہے ، بے گناہ کارکنان کو غیرقانونی طورپرگرفتارکرکے لاپتہ کیاجارہا ہے اورظلم کی انتہاء یہ ہے کہ ایم کیوایم کے جلاوطن اورروپوش رہنماؤں ، ذمہ داروں اورمتحرک کارکنان کے غیرسیاسی رشتہ داروں تک کو گرفتارکرکے لاپتہ کیاجارہا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ظلم وستم اور غیرقانونی چھاپوں گرفتاریوں کے ذریعہ نہ تو ایم کیوایم کے کارکنان کوخوف زدہ کیاجاسکتا ہے اورنہ ہی انہیں قائد تحریک جناب الطاف حسین کی قیادت میں حق پرستی کی جدوجہدسے بازرکھاجاسکتا ہے۔ رابطہ کمیٹی نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال اور وفاقی کابینہ سے مطالبہ کیاکہ رکن قومی اسمبلی سفیان یوسف کے گھرپر غیرقانونی چھاپے کا نوٹس لیاجائے اور پرامن مہاجرکارکنان اوران کے اہل خانہ کو ہراساں کرنے کاسلسلہ بند کرایاجائے۔
*****

11/21/2017 3:23:34 PM
سرکلر ...
19 Nov 2017