Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

رابطہ کمیٹی کے سینئررکن ساتھی اسحق ایڈوکیٹ اورمتعددکارکنوں کی گرفتاریاں کھلاظلم ہیں۔ الطاف حسین


رابطہ کمیٹی کے سینئررکن ساتھی اسحق ایڈوکیٹ اورمتعددکارکنوں کی گرفتاریاں کھلاظلم ہیں۔ الطاف حسین
 Posted on: 1/14/2017
رابطہ کمیٹی کے سینئررکن ساتھی اسحق ایڈوکیٹ اورمتعددکارکنوں کی گرفتاریاں کھلاظلم ہیں۔ الطاف حسین 
جب سے ایم کیوایم نے 21جنوری کوہونے والی ’’ استحکام پاکستان ریلی ‘‘ میں شرکت کااعلان کیاہے ریاستی آپریشن میں شدت آگئی ہے
ساتھی اسحق ایڈوکیٹ جوسینئر وکیل ہیں، جج بھی ر ہ چکے ہیں،ان پرکوئی مقدمہ نہیں ان تک کو گرفتار کرکے لاپتہ کردیاگیاہے
ساتھی اسحق ایڈوکیٹ ہائیکورٹ سے ضمانت قبل ازوقت گرفتاری منظور کرواچکے ہیں لیکن انہیں گرفتارکرکے قانون کی دھجیاں اڑادی گئی ہیں
گزشتہ تین روز کے دوران کراچی میں ایم کیوایم کے درجنوں کارکنوں کوگرفتارکیاجاچکاہے، وہ لاپتہ ہیں۔ الطاف حسین 
ایم کیوایم کے رہنماؤں،کارکنوں کی بڑے پیمانے پر گرفتاریاں اورانہیں غائب کردیناسراسرظلم ہے۔الطاف حسین
اگرکسی پر کوئی الزام ہے تواسے عدالت میں پیش کیاجائے ،انہیں غائب کرنے کاسلسلہ بند کیاجائے ۔الطاف حسین
انسانی حقوق پریقین رکھنے والے تمام جمہوریت پسندوں اورانسانی حقوق کی تنظیموں کواس پر آوازاحتجاج بلندکرنا چاہیے
وزیراعظم نوازشریف ایم کیوایم کے رہنماؤں، کارکنوں کی گرفتاریوں کاسلسلہ بند کرائیں۔الطاف حسین
سپریم کورٹ کے چیف جسٹس غیرقانونی گرفتاریوں اورجبری گمشدگیوں کے سنگین معاملات پر ازخودنوٹس لیں۔الطاف حسین

متحدہ قومی موومنٹ کے قائدجناب الطاف حسین نے کراچی میں رینجرزکی جانب سے ایم کیوایم کے رہنماؤں اورکارکنوں کے گھروں پر بڑے پیمانے پر چھاپوں اور ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے سینئررکن ساتھی اسحق ایڈوکیٹ اورمتعددکارکنوں کی گرفتاریوں کی شدیدمذمت کی ہے ۔ اپنے بیان میں جناب الطاف حسین نے کہاکہ ایم کیوایم کے خلاف 2013ء سے ایک بدترین ریاستی آپریشن جاری ہے جسکے دوران ایم کیوایم کے کئی رہنماؤں اور عہدیداروں سمیت ہزاروں کارکنوں کوگرفتارکیاجاچکاہے ، رابطہ کمیٹی کے ارکان کنورنوید، قمرمنصور، شاہدپاشا، پروفیسرحسن ظفرعارف ،مومن خان مومن، امجداللہ خان،اشرف نور اور ہزاروں کارکنان کوگرفتارکرکے جھوٹے مقدمات میں قیدکیاجاچکاہے اورجب سے ایم کیوایم نے پی کیوایم کے زیراہتمام 21جنوری کوہونے والی ’’استحکام پاکستان ریلی ‘‘ میں شرکت کااعلان کیاہے ایم کیوایم کے خلاف جاری ریاستی آپریشن اور ایم کیوایم کے رہنماؤں اورکارکنوں کی پکڑدھکڑ میں شدت آگئی ہے ، حتیٰ کہ ساتھی اسحق ایڈوکیٹ جوسینئر وکیل ہیں، جج بھی ر ہ چکے ہیں، انہوں نے ملک میں جمہوریت کی بحالی کے لئے برسوں جدوجہد کی ہے اورایک پرانے سیاسی ورکر کی حیثیت سے وہ ایم کیوایم کی جدوجہدمیں شامل ہوئے ، ان پر کسی قسم کاکوئی مقدمہ نہیں ان تک کو گرفتار کرکے لاپتہ کردیاگیاہے ۔ ساتھی اسحق ایڈوکیٹ ہائیکورٹ سے ضمانت قبل ازوقت گرفتاری منظور کرواچکے ہیں لیکن انہیں گرفتارکرکے عدالتی احکامات اور قانون کی دھجیاں اڑادی گئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ شہربھرمیں ایم کیوایم کے کارکنوں کے گھروں پر چھاپے مارے جارہے ہیں،گزشتہ تین روز کے دوران کراچی میں ایم کیوایم کے درجنوں کارکنوں کوگرفتارکیاجاچکاہے، جنہیں کسی عدالت میں پیش نہیں کیاگیااوروہ تاحال لاپتہ ہیں۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ ایم کیوایم کے رہنماؤں ، کارکنوں کی بڑے پیمانے پر گرفتاریاں اورانہیں غائب کردیناسراسرظلم اورانسانی حقوق کی سنگین خلاف ورذی ہے اورانسان حقوق پریقین رکھنے والے تمام جمہوریت پسندوں اورانسانی حقوق کی تنظیموں کواس پر آوازاحتجاج بلندکرنا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان میں کالعدم تنظیمیں تواپنی سرگرمیوں میں آزاد ہیں لیکن ایم کیوایم کواستحکام پاکستان کیلئے پرامن سرگرمی سے بھی روکا جارہاہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم نوازشریف سے مطالبہ کیاکہ ایم کیوایم کے رہنماؤں، کارکنوں کی گرفتاریوں کاسلسلہ بند کیاجائے، ساتھی اسحق ایڈوکیٹ، کنورنوید، قمر منصور ، شاہدپاشا، پروفیسرحسن ظفرعارف ،مومن خان مومن، امجداللہ خان،اشرف نور اورتمام اسیرکارکنان کورہا کیاجائے اوراگرکسی پر کوئی الزام ہے تواسے عدالت میں پیش کیاجائے ،انہیں غائب کرنے کاسلسلہ بند کیا جائے ۔ انہوں نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے بھی اپیل کی کہ وہ غیرقانونی گرفتاریوں اورجبری گمشدگیوں کے سنگین معاملات پر ازخودنوٹس لیں اور مظلوموں کوانصاف دلائیں۔ 

*****

10/19/2017 4:42:10 PM