Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفرعارف، مومن خان مومن اور امجداللہ خان سمیت تمام رہنماؤں اور کارکنوں کو فی الفور رہا کیاجائے، ڈاکٹرندیم احسان


پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفرعارف، مومن خان مومن اور امجداللہ خان سمیت تمام رہنماؤں اور کارکنوں کو فی الفور رہا کیاجائے، ڈاکٹرندیم احسان
 Posted on: 12/29/2016
پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفرعارف، مومن خان مومن اور امجداللہ خان سمیت تمام رہنماؤں اور
کارکنوں کو فی الفور رہا کیاجائے، ڈاکٹرندیم احسان رکن رابطہ کمیٹی متحدہ قومی موومنٹ
ڈاکٹر حسن ظفرعارف جن کی پوری زندگی علم وادب کے فروغ میں گزرگئی، ڈاکٹرندیم احسان
سینئر سیاستداں مومن خان مومن اور امجداللہ خان بھی کسی مقدمے میں قانون کو مطلوب نہیں ، ڈاکٹرندیم احسان
انہیں قائدتحریک الطاف حسین سے وفاداری کی پاداش میں گرفتارکرکے پابند سلاسل کردیا گیا ، ڈاکٹرندیم احسان
اگرصدرپاکستان کو کسی کی حمایت میں ایک لفظ کہنے پرایم پی او کے تحت جیل میں قید کردیا جائے توان کے دل پر کیاگزرے گی ؟
شہریوں کے بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنانا حکمرانوں کا بنیادی فرض ہے، ڈاکٹرندیم احسان

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن ڈاکٹر ندیم احسان نے یم کیوایم کے رہنماؤں اورکارکنوں کو پابندسلاسل رکھنے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایم کیوایم کے تمام رہنماؤں اورکارکنوں کو فی الفور رہا کیاجائے ۔ایک بیان میں ڈاکٹرندیم احسان نے کہاکہ رابطہ کمیٹی کے رکن 71 سالہ بزرگ پروفیسر، مؤرخ، دانشور ، جامعہ کراچی فلاسفی ڈپارٹمنٹ کے ریٹائرڈ ڈین اورپی ایچ ڈی ڈاکٹر حسن ظفرعارف جن کی پوری زندگی علم وادب کے فروغ میں گزرگئی، جو علیل بھی ہیں انہیں صرف قائد تحریک جناب الطاف حسین کے حق میں پریس کانفرنس کے جرم میں گرفتارکرکے جیل میں قیدکردیاگیا ، اسی طرح رابطہ کمیٹی کے ارکان و سینئر سیاستداں اوردانشور مومن خان مومن اورمعروف سیاسی وکاروباری شخصیت امجداللہ خان بھی کسی مقدمے میں قانون کو مطلوب نہیں رہے لیکن انہیں بھی قائدتحریک جناب الطاف حسین سے وابستگی کی پاداش میں گرفتارکرکے پابند سلاسل کردیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ اسی طرح ایم کیوایم کے سینکڑوں بے گناہ ذمہ داروں اورکارکنوں کو محض قائد تحریک جناب الطاف حسین سے وفاداری کی پاداش میں نہ صرف جھوٹے مقدمات میں گرفتارکرکے قیدوبند کی صعوبتیں برداشت کرنے پر مجبورکردیاگیا ہے بلکہ حراست کے دوران ان کے بنیادی انسانی حقوق بھی پامال کیے جارہے ہیں جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ ڈاکٹر ندیم احسان نے صدرپاکستان جناب ممنون حسین کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ اگر آپ کو کسی کی حمایت میں ایک لفظ کہنے کی پاداش میں جھوٹے مقدمات میں ملوث کردیا جائے اورایم پی او کے تحت جیل میں قید کردیا جائے تو آپ اورآپ کے اہل خانہ کے دلوں پر کیاگزرے گی ؟ ڈاکٹر ندیم احسان نے کہاکہ نئی نسل کو علم وشعور کی روشنی سے منور کرنے والے اساتذہ اوردانشوروں کو بغیرکسی جرم جیلوں میں قید کرنے اور انہیں انصاف سے محروم رکھنے کی ذمہ داری ارباب اقتدار پر عائد ہوتی ہے اور شہریوں کے بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنانا حکمرانوں کا بنیادی فرض ہے ۔ ڈاکٹر ندیم احسان نے صدرپاکستان ممنون حسین اوروزیراعظم میاں محمد نواز شریف سے مطالبہ کیاکہ پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفرعارف، مومن خان مومن اور امجداللہ خان سمیت ایم کیوایم کے تمام رہنماؤں اورکارکنوں کی غیرقانونی گرفتاریوں کافوری نوٹس لیاجائے اور تمام گرفتارشدگان کو فی الفور رہا کیاجائے ۔
*****

12/15/2017 1:48:58 PM