Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

جیلوں میں سیاسی اسیرکارکنان کے ساتھ عادی مجرموں جیسے برتاؤقابل مذمت ہے ، قاسم علی رضا


جیلوں میں سیاسی اسیرکارکنان کے ساتھ عادی مجرموں جیسے برتاؤقابل مذمت ہے ، قاسم علی رضا
 Posted on: 12/14/2016
جیلوں میں سیاسی اسیرکارکنان کے ساتھ عادی مجرموں جیسے برتاؤقابل مذمت ہے ، قاسم علی رضا
سینٹرل جیل حیدرآباد کی انتظامیہ کی جانب سے بھی جیل مینوئل کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں ، قاسم علی رضا
سیاسی اسیرکارکنان کے اہل خانہ سے ملاقات کیلئے رشوت مانگی جارہی ہے اور رشوت نہ دینے پر
اسیرکارکنان کو بہیمانہ تشددکا نشانہ بنایاجارہا ہے ،قاسم علی رضا
پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفر ، مومن خان مومن اورامجداللہ خان سمیت سینکڑوں کارکنان پابند سلاسل ہیں، قاسم علی رضا
پیپلزپارٹی کی حکومت کو یاد رکھنا چاہیے کہ ظلم کی حکومت کبھی قائم نہیں رہ سکتی، قاسم علی رضا
پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت کھلی آمریت پر اتر آئی ہے، قاسم علی رضا
انسانی حقوق کی ملکی اور بین الاقوامی تنظیمیں جیلوں میں اسیرکارکنان کے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لیں، قاسم علی رضا

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن قاسم علی رضا نے سینٹرل جیل حیدرآباد میں ایم کیوایم کے سیاسی اسیرکارکنان کے ساتھ عادی مجرموں جیسے برتاؤ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت کھلی آمریت پر اتر آئی ہے ۔ ایک بیان میں قاسم علی رضا نے کہاکہ ایک جانب پیپلزپارٹی کے رہنما یہ کھوکھلا دعویٰ کررہے ہیں کہ سندھ کی جیلوں میں کوئی سیاسی قیدی نہیں ہیں جبکہ دوسری جانب سندھ حکومت نے کراچی اور حیدرآباد کی جیلوں میں 75 سالہ بزرگ دانشور پروفیسر ڈاکٹر حسن ظفر عارف ، سینئر سیاسی رہنما مومن خان مومن اور معروف کاروباری شخصیت امجداللہ خان سمیت ایم کیوایم کے سینکڑوں کارکنان کوپابند سلاسل کررکھا ہے ۔ قاسم علی رضا نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی نام نہاد جمہوری حکومت ، ایم کیوایم دشمنی میں کھلی آمریت پر اترآئی ہے ، سندھ حکومت کی ایماء پر ایم کیوایم کے سیاسی اسیروں کے ساتھ عادی مجرموں جیسا برتاؤ کیاجارہا ہے اور ان سے جبری مشقت کرائی جارہی ہے۔قاسم علی رضا نے کہاکہ سینٹرل جیل حیدرآباد کی انتظامیہ کی جانب سے بھی جیل مینوئل کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں کی جارہی ہیں ، ایم کیوایم کے سیاسی اسیرکارکنان کے اہل خانہ سے ملاقات کیلئے رشوت مانگی جارہی ہے اور رشوت نہ دینے پر اسیرکارکنان کونہ صرف بہیمانہ تشددکا نشانہ بنایاجارہا ہے ، ان کا چہرہ پانی میں ڈبویا جارہا ہے بلکہ ان سے جبری مشقت لیکر انسانی حقوق کی خلاف وزری بھی کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی کی حکومت کو یاد رکھنا چاہیے کہ ظلم کی حکومت کبھی قائم نہیں رہ سکتی ۔
قاسم علی رضا نے وزیراعظم پاکستان میاں محمدنواز شریف ، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاوید باجوہ ،وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے مطالبہ کیاکہ سندھ کی جیلوں میں ایم کیوایم کے سیاسی اسیروں کے ساتھ عادی مجرموں جیسے برتاؤکا نوٹس لیاجائے ، ایم کیوایم کے سیاسی اسیروں پر مظالم کا سلسلہ بند کرایاجائے ، جیل مینوئل کی سختی سے پابندی کرائی جائے اوررابطہ کمیٹی کے ارکان پروفیسرڈاکٹر حسن عارف، مومن خان مومن اور امجداللہ خان سمیت ایم کیوایم کے تمام اسیروں کو فی الفور رہاکیاجائے ۔قاسم علی رضا نے انسانی حقوق کی ملکی اور بین الاقوامی تنظیموں سے بھی اپیل کی کہ وہ ایم کیوایم کے اسیرکارکنان کے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لیں اور اس ظلم کے خلاف آواز بلند کریں۔
*****


6/29/2017 7:26:34 AM