Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین


کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
 Posted on: 10/29/2016
کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے، الطاف حسین
کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی ہے، الطاف حسین
کراچی آپریشن کامقصد قیام امن نہیں بلکہ متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرناہے ، الطاف حسین
بے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں، الطاف حسین
ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے، الطاف حسین


متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ناظم آبادمیں مجلس عزا پر دہشت گردوں فائرنگ کے المناک واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد کے شہید وزخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطا ف حسین نے کہاکہ معصوم وبے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اور بے گناہ شہریوں کی جان ومال سے کھیلنے والے کسی بھی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہوسکتے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ نے برسوں شب وروز محنت کرکے صوبہ سند ھ بالخصوص کراچی میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کی جس کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے اور ایم کیوایم کی سیاسی وسماجی سرگرمیوں پر قدغن لگائی جارہی ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ کراچی میں ایم کیوایم کے خلاف گزشتہ تین برسوں سے جاری آپریشن اسلئے کیاجارہا ہے تاکہ ایم کیوایم جیسی لبرل ، روشن خیال اور ترقی پسند جماعت کو ختم کرکے کراچی پر مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرایاجاسکے جو اپنے علاوہ کسی کو مسلمان تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مخالف مسلک وعقائد رکھنے والوں کو کافر قراردیکر قتل کرتے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، فرقہ وارانہ دہشت گردی ، بھتہ خوری ، اغواء برائے تاوان کی وارداتیں اور اسٹریٹ کرائمز میں اضافہ سے ثابت ہوگیا ہے کہ یہ آپریشن قیام امن کیلئے نہیں بلکہ صرف اورصرف متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرنے کیلئے کیاجارہا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کے گھناؤنے عزائم کو کامیاب بنایاجاسکے ۔ ان تمام حقائق کو دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں گروپوں کا قبضہ کرانا اور ایم کیوایم جیسی لبرل جماعت کو ختم کرنا رینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، یہی وجہ ہے کہ رینجرز کی سرپرستی میں کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی دیدی گئی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ سے وابستگی کو جرم بنادیا گیا ہے اوراس کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم میاں نوازشریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیاکہ ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے اور تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد کو جان ومال کا تحفظ فراہم کیاجائے ۔ انہوں نے جاں بحق ہونے والے افرادکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں مجھ سمیت ایم کیوایم کے تمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ تمام شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ، سوگوارلواحقین کو صبرجمیل عطا کرے اور سفاک قاتلوں پر اپنا عذاب نازل کرے ۔ جناب الطاف حسین نے دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے افراد کی جلدومکمل صحت یابی کیلئے بھی دعا کی ۔
*****


کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے، الطاف حسین
کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی ہے، الطاف حسین
کراچی آپریشن کامقصد قیام امن نہیں بلکہ متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرناہے ، الطاف حسین
بے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں، الطاف حسین
ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے، الطاف حسین

لندن۔۔۔29، اکتوبر2016ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ناظم آبادمیں مجلس عزا پر دہشت گردوں فائرنگ کے المناک واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد کے شہید وزخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطا ف حسین نے کہاکہ معصوم وبے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اور بے گناہ شہریوں کی جان ومال سے کھیلنے والے کسی بھی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہوسکتے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ نے برسوں شب وروز محنت کرکے صوبہ سند ھ بالخصوص کراچی میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کی جس کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے اور ایم کیوایم کی سیاسی وسماجی سرگرمیوں پر قدغن لگائی جارہی ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ کراچی میں ایم کیوایم کے خلاف گزشتہ تین برسوں سے جاری آپریشن اسلئے کیاجارہا ہے تاکہ ایم کیوایم جیسی لبرل ، روشن خیال اور ترقی پسند جماعت کو ختم کرکے کراچی پر مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرایاجاسکے جو اپنے علاوہ کسی کو مسلمان تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مخالف مسلک وعقائد رکھنے والوں کو کافر قراردیکر قتل کرتے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، فرقہ وارانہ دہشت گردی ، بھتہ خوری ، اغواء برائے تاوان کی وارداتیں اور اسٹریٹ کرائمز میں اضافہ سے ثابت ہوگیا ہے کہ یہ آپریشن قیام امن کیلئے نہیں بلکہ صرف اورصرف متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرنے کیلئے کیاجارہا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کے گھناؤنے عزائم کو کامیاب بنایاجاسکے ۔ ان تمام حقائق کو دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں گروپوں کا قبضہ کرانا اور ایم کیوایم جیسی لبرل جماعت کو ختم کرنا رینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، یہی وجہ ہے کہ رینجرز کی سرپرستی میں کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی دیدی گئی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ سے وابستگی کو جرم بنادیا گیا ہے اوراس کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم میاں نوازشریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیاکہ ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے اور تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد کو جان ومال کا تحفظ فراہم کیاجائے ۔ انہوں نے جاں بحق ہونے والے افرادکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں مجھ سمیت ایم کیوایم کے تمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ تمام شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ، سوگوارلواحقین کو صبرجمیل عطا کرے اور سفاک قاتلوں پر اپنا عذاب نازل کرے ۔ جناب الطاف حسین نے دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے افراد کی جلدومکمل صحت یابی کیلئے بھی دعا کی ۔
*****
کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے، الطاف حسین
کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی ہے، الطاف حسین
کراچی آپریشن کامقصد قیام امن نہیں بلکہ متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرناہے ، الطاف حسین
بے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں، الطاف حسین
ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے، الطاف حسین

لندن۔۔۔29، اکتوبر2016ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ناظم آبادمیں مجلس عزا پر دہشت گردوں فائرنگ کے المناک واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد کے شہید وزخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطا ف حسین نے کہاکہ معصوم وبے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اور بے گناہ شہریوں کی جان ومال سے کھیلنے والے کسی بھی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہوسکتے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ نے برسوں شب وروز محنت کرکے صوبہ سند ھ بالخصوص کراچی میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کی جس کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے اور ایم کیوایم کی سیاسی وسماجی سرگرمیوں پر قدغن لگائی جارہی ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ کراچی میں ایم کیوایم کے خلاف گزشتہ تین برسوں سے جاری آپریشن اسلئے کیاجارہا ہے تاکہ ایم کیوایم جیسی لبرل ، روشن خیال اور ترقی پسند جماعت کو ختم کرکے کراچی پر مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرایاجاسکے جو اپنے علاوہ کسی کو مسلمان تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مخالف مسلک وعقائد رکھنے والوں کو کافر قراردیکر قتل کرتے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، فرقہ وارانہ دہشت گردی ، بھتہ خوری ، اغواء برائے تاوان کی وارداتیں اور اسٹریٹ کرائمز میں اضافہ سے ثابت ہوگیا ہے کہ یہ آپریشن قیام امن کیلئے نہیں بلکہ صرف اورصرف متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرنے کیلئے کیاجارہا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کے گھناؤنے عزائم کو کامیاب بنایاجاسکے ۔ ان تمام حقائق کو دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں گروپوں کا قبضہ کرانا اور ایم کیوایم جیسی لبرل جماعت کو ختم کرنا رینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، یہی وجہ ہے کہ رینجرز کی سرپرستی میں کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی دیدی گئی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ سے وابستگی کو جرم بنادیا گیا ہے اوراس کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم میاں نوازشریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیاکہ ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے اور تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد کو جان ومال کا تحفظ فراہم کیاجائے ۔ انہوں نے جاں بحق ہونے والے افرادکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں مجھ سمیت ایم کیوایم کے تمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ تمام شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ، سوگوارلواحقین کو صبرجمیل عطا کرے اور سفاک قاتلوں پر اپنا عذاب نازل کرے ۔ جناب الطاف حسین نے دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے افراد کی جلدومکمل صحت یابی کیلئے بھی دعا کی ۔
*****
کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے، الطاف حسین
کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی ہے، الطاف حسین
کراچی آپریشن کامقصد قیام امن نہیں بلکہ متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرناہے ، الطاف حسین
بے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں، الطاف حسین
ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے، الطاف حسین

لندن۔۔۔29، اکتوبر2016ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ناظم آبادمیں مجلس عزا پر دہشت گردوں فائرنگ کے المناک واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد کے شہید وزخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطا ف حسین نے کہاکہ معصوم وبے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اور بے گناہ شہریوں کی جان ومال سے کھیلنے والے کسی بھی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہوسکتے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ نے برسوں شب وروز محنت کرکے صوبہ سند ھ بالخصوص کراچی میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کی جس کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے اور ایم کیوایم کی سیاسی وسماجی سرگرمیوں پر قدغن لگائی جارہی ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ کراچی میں ایم کیوایم کے خلاف گزشتہ تین برسوں سے جاری آپریشن اسلئے کیاجارہا ہے تاکہ ایم کیوایم جیسی لبرل ، روشن خیال اور ترقی پسند جماعت کو ختم کرکے کراچی پر مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرایاجاسکے جو اپنے علاوہ کسی کو مسلمان تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مخالف مسلک وعقائد رکھنے والوں کو کافر قراردیکر قتل کرتے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، فرقہ وارانہ دہشت گردی ، بھتہ خوری ، اغواء برائے تاوان کی وارداتیں اور اسٹریٹ کرائمز میں اضافہ سے ثابت ہوگیا ہے کہ یہ آپریشن قیام امن کیلئے نہیں بلکہ صرف اورصرف متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرنے کیلئے کیاجارہا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کے گھناؤنے عزائم کو کامیاب بنایاجاسکے ۔ ان تمام حقائق کو دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں گروپوں کا قبضہ کرانا اور ایم کیوایم جیسی لبرل جماعت کو ختم کرنا رینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، یہی وجہ ہے کہ رینجرز کی سرپرستی میں کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی دیدی گئی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ سے وابستگی کو جرم بنادیا گیا ہے اوراس کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم میاں نوازشریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیاکہ ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے اور تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد کو جان ومال کا تحفظ فراہم کیاجائے ۔ انہوں نے جاں بحق ہونے والے افرادکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں مجھ سمیت ایم کیوایم کے تمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ تمام شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ، سوگوارلواحقین کو صبرجمیل عطا کرے اور سفاک قاتلوں پر اپنا عذاب نازل کرے ۔ جناب الطاف حسین نے دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے افراد کی جلدومکمل صحت یابی کیلئے بھی دعا کی ۔
*****
کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرانا ینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، الطاف حسین
فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کرنے کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے، الطاف حسین
کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی ہے، الطاف حسین
کراچی آپریشن کامقصد قیام امن نہیں بلکہ متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرناہے ، الطاف حسین
بے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں، الطاف حسین
ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے، الطاف حسین

لندن۔۔۔29، اکتوبر2016ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ناظم آبادمیں مجلس عزا پر دہشت گردوں فائرنگ کے المناک واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد کے شہید وزخمی ہونے پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطا ف حسین نے کہاکہ معصوم وبے گناہ شہریوں کو خاک وخون میں نہلانے والے انسان کہلانے کے بھی مستحق نہیں ہیں اور بے گناہ شہریوں کی جان ومال سے کھیلنے والے کسی بھی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں ہوسکتے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ متحدہ قومی موومنٹ نے برسوں شب وروز محنت کرکے صوبہ سند ھ بالخصوص کراچی میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی قائم کی جس کی پاداش میں ایم کیوایم کے خلاف آپریشن کیاجارہا ہے اور ایم کیوایم کی سیاسی وسماجی سرگرمیوں پر قدغن لگائی جارہی ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ کراچی میں ایم کیوایم کے خلاف گزشتہ تین برسوں سے جاری آپریشن اسلئے کیاجارہا ہے تاکہ ایم کیوایم جیسی لبرل ، روشن خیال اور ترقی پسند جماعت کو ختم کرکے کراچی پر مذہبی انتہاء پسند جہادیوں کا قبضہ کرایاجاسکے جو اپنے علاوہ کسی کو مسلمان تسلیم کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں اور مخالف مسلک وعقائد رکھنے والوں کو کافر قراردیکر قتل کرتے رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ کراچی میں جاری آپریشن کے باوجود قتل وغارتگری ، فرقہ وارانہ دہشت گردی ، بھتہ خوری ، اغواء برائے تاوان کی وارداتیں اور اسٹریٹ کرائمز میں اضافہ سے ثابت ہوگیا ہے کہ یہ آپریشن قیام امن کیلئے نہیں بلکہ صرف اورصرف متحدہ قومی موومنٹ کو ختم کرنے کیلئے کیاجارہا ہے تاکہ اسٹیبلشمنٹ کے گھناؤنے عزائم کو کامیاب بنایاجاسکے ۔ ان تمام حقائق کو دیکھ کر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کراچی میں مذہبی انتہاء پسند جہادیوں گروپوں کا قبضہ کرانا اور ایم کیوایم جیسی لبرل جماعت کو ختم کرنا رینجرز کے ایجنڈے میں شامل ہے ، یہی وجہ ہے کہ رینجرز کی سرپرستی میں کالعدم جہادی تنظیموں کو کراچی میں کھلے عام جلسہ جلوس اور چندہ اکٹھاکرنے کی آزادی دیدی گئی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ سے وابستگی کو جرم بنادیا گیا ہے اوراس کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے وزیراعظم میاں نوازشریف ، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیاکہ ناظم آباد میں بے گناہ شہریوں کے سفاک قاتلوں کو گرفتارکرکے عبرتناک سزا دی جائے اور تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے افراد کو جان ومال کا تحفظ فراہم کیاجائے ۔ انہوں نے جاں بحق ہونے والے افرادکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں مجھ سمیت ایم کیوایم کے تمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ اللہ تعالیٰ تمام شہداء کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطافرمائے ، سوگوارلواحقین کو صبرجمیل عطا کرے اور سفاک قاتلوں پر اپنا عذاب نازل کرے ۔ جناب الطاف حسین نے دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے افراد کی جلدومکمل صحت یابی کیلئے بھی دعا کی ۔
*****

12/3/2016 5:40:02 AM