Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

پروفیسرحسن ظفرعارف، کنورخالدیونس، امجداللہ خان اور ظفرراجپوت اوردیگر ذمہ داروں اورکارکنوں کی گرفتاریاں اور چھا پے سراسرظلم ہیں۔الطاف حسین


پروفیسرحسن ظفرعارف، کنورخالدیونس، امجداللہ خان اور ظفرراجپوت اوردیگر ذمہ داروں اورکارکنوں کی گرفتاریاں اور چھا پے سراسرظلم ہیں۔الطاف حسین
 Posted on: 10/23/2016
پروفیسرحسن ظفرعارف، کنورخالدیونس، امجداللہ خان اور ظفرراجپوت اوردیگر ذمہ داروں اورکارکنوں
کی گرفتاریاں اور چھا پے سراسرظلم ہیں۔الطاف حسین
پروفیسرڈاکٹر حسن ظفرعارف نے لاکھوں طلباوطالبات کو زیورعلم سے آراستہ کیا ، انہیں گرفتارکرتے ہوئے 
قانون نافذکرنے والے ادارے کے اہلکاروں نے کوئی شرم محسوس نہیں کی
اگر جنرل راحیل شریف کے خاندان کے کسی 75 سالہ بزرگ استاد کو گرفتار کیا جائے تو ان کے دل پر کیا گزرے گی ؟ 
پاکستان کومردہ باد کہنازیادہ بڑاجرم ہے یاپاکستان توڑدینا زیادہ بڑاجرم ہے؟ الطاف حسین
جس نے پاکستان کوتوڑااس کوتوکندھے پربٹھایاجاتاہے لیکن جو ظلم کے واقعات پر فرط جذبات میں پاکستان مردہ باد کانعرہ لگائے اسے معافی مانگنے کے باوجوداسٹیبلشمنٹ معاف کرنے پر تیارنہیں
ایم کیوایم کے خلاف بیانات د ینے والے پیپلزپارٹی کے رہنماسندھی عوام کے سب سے بڑے دشمن اوربھٹو خاندان کے قاتلوں
کا ساتھ دینے والے ہیں
حضرت علی کرم اللہ وجہ کا قول ہے کہ کفرکی حکومت قائم رہ سکتی ہے لیکن ظلم کی حکومت قائم نہیں رہ سکتی۔الطاف حسین
آج مہاجرقوم کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ انہیں یزیدی لشکر کاساتھ دیناہے یاحسینی قافلے کاساتھ دیناہے۔الطاف حسین
الطاف حسین حسینیت کاغلام ہے، وہ جان تودے سکتاہے مگریزیدیت کے آگے سجدہ نہیں کرسکتااورکسی ظالم وجابرکی بیعت نہیں کرسکتا
مہاجرقوم کی قربانیوں سے بڑے بڑے عہدے حاصل کرکے ارب پتی بننے والے بے ضمیرعناصرنے مہاجرقوم کا سودا کرلیا
قوم کے میرجعفرومیرصادق کے پاس جانے والے بھی قوم اورتحریک سے بے وفائی کے مرتکب ہورہے ہیں۔الطاف حسین
ان باوفا کارکنوں، ماؤں، بہنوں، بزرگوں اورنوجوانوں کوسلام پیش کرتاہوں جوتمام ترظلم کے باوجود تحریک اورنظریہ سے وفا نبھارہے ہیں

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے رینجرز کی جانب سے ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے ارکان پروفیسرڈاکٹرحسن ظفرعارف، کنورخالدیونس، امجداللہ خان اورحیدرآباد کے ایڈہاک زونل انچارج ظفرراجپوت سمیت متعدد ذمہ داروں اورکارکنوں کی اندھادھند غیرقانونی گرفتاریوں، چھاپوں اور مہاجربستیوں کے محاصروں کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اوراسے سراسرظلم قراردیاہے ۔
ایم کیوایم کے رہنماؤں اورکارکنوں کی اندھادھندگرفتاریوں ،چھاپوں اورمظالم کے واقعات پر اظہارخیال کرتے ہوئے جناب الطاف حسین نے کہاکہ بے ضمیر اوربے ادب سرکاری اہلکاروں کی نظر میں اساتذہ اور بزرگوں کی عزت وتکریم کی کوئی اہمیت نہیں ہے یہی وجہ ہے کہ 70 سالہ پی ایچ ڈی اور فلاسفر پروفیسرڈاکٹر حسن ظفرعارف جنہوں نے پاکستان کی سب سے بڑی یونیورسٹی جامعہ کراچی میں فلاسفی ڈپارٹمنٹ کے ہیڈکی حیثیت سے اورملک کے دیگر تعلیمی اداروں میں فروغ علم کیلئے برسہابرس خدمات انجام دیں اورلاکھوں طلباوطالبات کو زیورعلم سے آراستہ کیا ، انہیں گرفتارکرتے ہوئے قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں نے کوئی شرم محسوس نہیں کی۔رابطہ کمیٹی کے رکن امجداللہ خان کو حق پرستانہ جدوجہد میں ساتھ دینے کی پاداش میں قانون نافذکرنے والے ادارے نے گرفتارکرلیاگیا، اسی طرح کنورخالدیونس جیسے اعلیٰ تعلیم یافتہ ، سینئر سیاستداں جوچارمرتبہ قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے اور فالج کے مرض میں مبتلا ہیں انہیں بھی بلاجوا زگرفتارکرلیاگیا،حیدرآباد کی ایڈہاک زونل کمیٹی کے انچارج ظفرراجپوت کو بھی تحریک سے وفادا ری کے جرم میں گرفتارکیاگیا۔جبکہ رابطہ کمیٹی کے ارکان ساتھی اسحاق ایڈوکیٹ ، اشرف نور،حیدرآبادزونل کمیٹی کے رکن رشید بھیااوردیگرذمہ داروں کے گھروں پر بھی غیرقانونی چھاپے مارے گئے اوران کے نہ ملنے پر اہل خانہ کو ہراساں کیاگیا۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ رینجرز کی جانب سے حیدرآبادمیں فقیرکاپڑ اور دیگر علاقوں میں مہاجربستیوں کا محاصرہ کرکے گھرگھر چھاپے مارے گئے اورایم کیوایم کے کئی کارکنوں اوران کے رشتہ داروں کو گرفتارکرلیاگیا۔ انہوں نے کہا کہ رینجرز اہلکاروں نے حیدرآبادمیں مہاجربستیوں پرچڑھائی کررکھی ہے اورغیرقانونی چھاپوں کے دوران مہاجر ماؤں، بہنوں اور بزرگوں کے ساتھ دشمن ملک کی فوجوں جیسا سلوک کیاجارہا ہے ، گھروں میں تھوڑپھوڑکی جارہی ہے،چادروچہاردیواری کا تقدس بری طرح پامال کیاجارہاہے اور حق پرستی کاساتھ دینے والوں کو ظلم کانشانہ بنایاجارہا ہے ۔ جناب الطاف حسین نے کہاکہ جنرل راحیل شریف مسلح افواج کے سربراہ ہیں ، اگر ان کے خاندان کے 75 سالہ بزرگ کو گرفتار کیا جائے جو استاد بھی ہو تو ان کے دل پر کیا گزرے گی ؟ وہ چیف آف آرمی اسٹاف ہیں، ان کے دور میں 75 سالہ بزرگ استاد پروفیسرڈاکٹر حسن ظفرعارف کو گرفتار کیا گیا ہے، اگراس ظلم پر کوئی آپ کوظالم وجابراوریزیدی قوتوں کا آلہء کارقراردے توکیایہ درست نہ ہوگا؟
جناب الطاف حسین نے کہاکہ آج پاکستان کے لوگ اس بات کاجواب دیں کہ پاکستان کومردہ باد کہنازیادہ بڑاجرم ہے یاپاکستان توڑدینا زیادہ بڑاجرم ہے؟ انہوں نے کہاکہ یہ انتہائی افسوسناک امرہے کہ جس نے پاکستان کوتوڑااس کوتوکندھے پربٹھایاجاتاہے لیکن جوظلم وبربریت کے خلاف آوازاٹھائے، جو گرفتاریوں، دوران حراست قتل، ماورائے عدالت قتل اورمظالم کی مذمت کرتاہو، جس نے اگرظلم کے واقعات پر فرط جذبات میں پاکستان مردہ باد کانعرہ لگانے پر معافی مانگ لی لیکن اس کے باوجود اسٹیبلشمنٹ اس کومعاف کرنے پر تیارنہیں۔
جناب الطاف حسین نے مہاجرقوم کے ایک ایک فرد کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ میں نے 40 سالہ جدوجہد کے دوران قیدوبند کی صعوبتیں برداشت کیں، ٹارچرسیلوں کی اذیتوں کاسامنا کیالیکن کسی ظلم وجبرکے سامنے ہتھیارنہیں ڈالے ،میں 26 سال سے جلاوطنی کی کربناک زندگی گزار رہا ہوں ، میں نے اپنے بڑے بھائی ناصرحسین اوربھتیجے عارف حسین سمیت ہزاروں ساتھیوں کی شہادتوں کے صدمات جھیلے لیکن کسی بھی ظالم کے سامنے اپنا سرنہیں جھکایااورجب تک میری آخری سانس باقی ہے میں اللہ تعالیٰ کے علاوہ کسی ظالم کے آگے اپنا سرہرگز نہیں جھکاؤں گا۔ انہوں نے کہاکہ مہاجرقوم کا ایک ایک فرد دیکھ لے کہ ان کے روحانی باپ ،بڑے بھائی اوربیٹے الطاف حسین نے کبھی دشمنوں کے آگے اپنا سرنہیں جھکایا ، نہ آج جھکارہا ہے اورنہ ہی آئندہ کبھی جھکائے گا۔ میں آج بھی اپنے مشن ومقصد پر قائم ہوں اورجب تک سفاک ظالموں سے اپنے ایک ایک شہید ساتھی کے خون اورمہاجرقوم پرڈھائے جانے والے ایک ایک ظلم کا حساب نہیں لے لیتا میں چین سے ہرگزنہیں بیٹھوں گا۔ 
جناب الطاف حسین نے ایم کیوایم کے خلاف پیپلزپارٹی کے بعض رہنماؤں کے شرانگیز بیانات کاتذکرہ کرتے ہوئے کہاکہ پیپلزپارٹی کے جورہنما آج ایم کیوایم کے خلاف بیانات دے رہے ہیں وہ سندھی عوام کے سب سے بڑے دشمن اوربھٹو خاندان کے قاتلوں کا ساتھ دینے والے عناصر ہیں ۔ میں سندھی بولنے والے عوام کو بتانا چاہتا ہوں کہ انہی عناصر نے ذوالفقارعلی بھٹو کو قتل کرایاہے جو آج ایم کیوایم اور الطاف حسین کے خلاف بیانات دیکر ظالموں کا ساتھ دے رہے ہیں اور مہاجروں کے خلاف بدترین آپریشن کودرست اورجائز قراردے رہے ہیں ۔جناب الطاف حسین نے سندھی عوام کومخاطب کرتے ہوئے کہاکہ ذوالفقارعلی بھٹو ،بینظیربھٹومرتضیٰ بھٹواورشاہنوازبھٹو کوسازش کے تحت قتل توکسی اورنے کیالیکن اس قتل کی سازش کرنے والے پیپلزپارٹی کے وہی لوگ ہیں جوآج ایم کیوایم کوگالیاں دے رہے ہیں ۔
جناب الطاف حسین نے کہاکہ حضرت علی کرم اللہ وجہ کا قول ہے کہ کفرکی حکومت قائم رہ سکتی ہے لیکن ظلم کی حکومت قائم نہیں رہ سکتی ۔ آج مہاجرقوم کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ انہیں یزیدی لشکر کاساتھ دیناہے یاحسینی قافلے کاساتھ دیناہے، مہاجروں کویزیدیت کے ساتھ جانا ہے یاحسینیت کے ساتھ آناہے ۔انہوں نے کہا کہ الطاف حسین حسینیت کاغلام ہے، وہ جان تودے سکتاہے مگریزیدیت کے آگے سجدہ نہیں کرسکتااورکسی ظالم وجابرکی بیعت نہیں کرسکتا۔
جناب الطاف حسین نے کہاکہ ایک جانب رینجرز کی مہاجردشمن کارروائیاں جاری ہیں دوسری جانب فاروق ستارسمیت مہاجرقوم کا سودا کرنے والے اور مہاجرقوم کی قربانیوں سے بڑے بڑے عہدے حاصل کرکے ارب پتی بننے والے بے ضمیراوربے غیرت عناصرہیں جنہوں نے مہاجرقوم کا سودا کرلیا، جنہوں نے تحریک کے قائد سے لاتعلقی کااظہار کیا، وہ ایک طرف تو مہاجردشمنوں کی دلالی کرکے کراچی اورحیدرآبادمیں حق پرستی کا ساتھ دینے والے ایم کیو ایم کے ذمہ داروں اور کارکنوں کو گرفتارکرارہے ہیں دوسری جانب یہ ضمیرفروش لوگ تحریک کے ہراس شخص کوپارٹی سے خارج کر رہے ہیں جس نے تحریک اور تحریک کے بانی و قائد سے وفاداری نبھائی اورضمیرفروشوں کا ساتھ نہ دینے کا اعلان کیاہے۔ ایسے بے ضمیراور قوم فروش عناصر پراللہ تعالیٰ کاعذاب نازل ہوگا۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ آج میں مہاجرقوم اور حق پرست شہداء کے لہو کا سودا کرنے والے فاروق ستار کو مہاجرقوم کا میرجعفرومیرصادق اعلیٰ قرار دیتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ قوم کے میرجعفرومیرصادق کے پاس جانے والے بھی ظرف وضمیرسے عاری اور احسان فراموش ہیں جومیرجعفر اعلیٰ کے قدموں میں بیٹھ کر قوم اورتحریک سے بے وفائی کے مرتکب ہورہے ہیں اورمہاجرقوم کے شہداء کالہوچاٹ رہے ہیں خواہ وہ بزرگ ہوں ، خواتین ہوں یا نوجوان ہوں ۔ 
جناب الطاف حسین نے کہاکہ میں اپنے ان باوفااورباضمیرکارکنوں، ماؤں، بہنوں، بزرگوں اورنوجوانوں کوسلام پیش کرتاہوں جوتمام ترظلم وجبراورسازشی ہتھکنڈوں کے باوجود تحریک اورنظریہ سے اپنی وفانبھارہے ہیں اورثابت قدمی کے ساتھ جدوجہدجاری رکھے ہوئے ہیں۔ 
*****

12/3/2016 5:41:51 AM