Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

قومی اسمبلی میں محمود خان اچکزئی کی تقریر انتہائی افسوسناک اور حقائق کے برخلاف ہے، ڈاکٹر فاروق ستار


قومی اسمبلی میں محمود خان اچکزئی کی تقریر انتہائی افسوسناک اور حقائق کے برخلاف ہے، ڈاکٹر فاروق ستار
 Posted on: 9/18/2013
قومی اسمبلی میں محمود خان اچکزئی کی تقریر انتہائی افسوسناک اور حقائق کے برخلاف ہے، ڈاکٹر فاروق ستار
قیام پاکستان کیلئے لاکھوں جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والوں کی قربانیوں کو محض حادثہ قرار دینا ان شہداء کی قربانیوں کے ساتھ ساتھ سرزمین پاکستان کی بھی توہین ہے
یوپی، سی پی، بہار، مشرقی پنجاب اور دیگر علاقوں کے لاکھو ں خاندانوں نے اس لئے اپنا سب کچھ اس وطن کیلئے قربان نہیں کیا تھا کہ انہیں وہ لوگ طعنے دیں گے جن کے اپنے صوبے میں آج پاکستان کا پرچم لہرانا جرم بنادیا گیا ہے
سینئر سیاستداں سے یہ قطعی توقع نہیں تھی کہ وہ تعصب کی بنیاد پر تاریخی و زمینی حقائق کو مسخ کرنے کی طفلانہ کوشش کریں گے
پاکستان کو اس وقت سنگین داخلی و بیرونی خطرات و چیلنجز کا سامنا ہے اس لئے ہمیں اس وقت انتشار و اختلاف کی نہیں بلکہ اتحاد و اتفاق کی ضرورت ہے
غیر متعصبانہ اور غیر جانبدارانہ کمیشن بنا کر 12، مئی 2007ء کے واقعات کے اصل ملزموں اور کرداروں کو قوم کے سامنے لایا جائے
پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کی قومی اسمبلی میں تقریر پر تبصرہ 
کراچی ۔۔۔18،ستمبر2013ء
قومی اسمبلی میں متحدہ قومی موومنٹ کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر فاروق ستار نے قومی اسمبلی میں پختونخواملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی کی تقریر کو انتہائی افسوسناک ، آداب کے منافی اور حقائق کے برخلاف قراردیا ہے۔ ایک بیان میں ڈاکٹرفاروق ستار نے کہاکہ محمود خان اچکزئی ایک انتہائی سینئر سیاستداں اورپارلیمنٹرین ہیں اورہمیں ان سے یہ قطعی توقع نہیں تھی کہ وہ تعصب اور لسانی نفرت کی بنیاد پر تاریخی وزمینی حقائق کو مسخ کرنے کی طفلانہ کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ قیام پاکستان کے 65 برس بعد اس وطن کے قیام کیلئے لاکھوں جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والوں کی قربانیوں کو محض حادثہ قراردینا ان شہداء کی قربانیوں کے ساتھ ساتھ سرزمین پاکستان کی بھی توہین کے مترادف ہے ۔ انہوں نے کہاکہ یوپی ، سی پی، بہار، مشرقی پنجاب اور دیگر علاقوں کے لاکھو ں خاندانوں نے اس لئے اپنا سب کچھ اس وطن کیلئے قربان نہیں کیاتھا کہ انہیں وہ لوگ طعنے دیں گے جن کے اپنے صوبے میں آج پاکستان کا پرچم لہرانا جرم بنادیا گیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ روز قائد تحریک جناب الطاف حسین نے اپنی سالگرہ کے اجتماع سے خطاب میں یہ واضح طور پرکہاکہ تھا کہ پاکستان کو اس وقت سنگین داخلی وبیرونی خطرات وچیلنجز کا سامنا ہے اس لئے ہمیں اس وقت انتشار واختلاف کی نہیں بلکہ اتحاد واتفاق کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ محمود خان اچکزئی کراچی کے بارے میں اظہار خیال کرنے سے قبل یہ بات بھی ذہن مین رکھیں کہ وہ اس صوبے سے تعلق رکھتے ہیں جسے خود انتہائی المناک صورتحال کا سامنا ہے اور جہا ں صورتحال اس حدتک خراب ہوچکی ہے کہ وہاں گزشتہ کئی برسوں سے 14 ،اگست اور 23، مارچ کی قومی تقریبات کاانعقاد تک ناممکن ہوگیا ہے ، جہاں قومی پرچم لہرانا تک جرم بنادیا گیا ہے ، جہاں لوگوں کو بسوں سے اتارکر ان کی زبان کی بنیاد پر قتل کرنا معمول بن چکا ہے اور جہاں حال ہی میں بانی پاکستان کی آخری آرام گاہ کو جلاکر راکھ کردیا گیا ۔ڈاکٹر فاروق ستار نے کہاکہ جہاں تک 12، مئی کا تعلق ہے تو ایم کیوایم خود اس روز کے واقعات کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کا متعدد بار مطالبہ کرچکی ہے اور ایک مرتبہ پھر اس مطالبے کو دہراتی ہے کہ ایک غیرمتعصبانہ اور غیرجانبدارانہ کمیشن بناکر 12، مئی 2007ء کے واقعات کے اصل ملزموں اور کرداروں کو قوم کے سامنے لایا جائے خوان ان کا تعلق کسی سے بھی ہو۔

12/8/2016 3:52:04 AM