Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سندھ یونیورسٹی ترمیمی بل 2013ء سندھ میں دیہی اور شہری کی تفریق ہے، انجینئر توصیف اعجاز


 Posted on: 9/5/2013 1
اساتذہ اور طلباء سندھ کی تقسیم کے اس عمل کے خلاف بھر پور صدائے احتجاج بلند کریں
تعلیم پر سیاست قوموں اور ملکوں کو تباہی کے دہانے پر لے جاتی ہے
وہ دن دور نہیں جب ملک کے ہر کونے میں حق پرستی کا پرچم لہرائے گا، عادل خان
اے پی ایم ایس او کے سیکٹر اے، بی کے کارکنان کے جنرل ورکرز اجلاس سے خطاب
کراچی ۔۔۔۔ 05؍ ستمبر 2013ء
آل پاکستان متحدہ اسٹوڈینٹس آرگنائزیشن کے سیکریٹری جنرل توصیف اعجاز نے کہا ہے کہ سندھ یونیورسٹی ترمیمی بل 2013ء سندھ میں دیہی اور شہری کی تفریق ہے اور اس کی منظوری سے طلبا ء و اساتذہ میں احساس محرومی جنم لے رہا ہے۔ تعلیم پر سیاست قوموں اور ملکوں کو تباہی کے دہانے پر لے جاتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے اے پی ایم ایس او کی جانب سے سیکٹر اے اور سیکٹر بی میں منعقدہ جنرل ورکرز اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے کیا ۔ انھوں نے کہاکہ وہ تمام سیاسی و مذ ہبی جماعتیں جو کراچی کے نوجوانوں کی بات کرتی ہیں اس ترمیمی بل پر خاموش ہیں ۔ انھوں نے بل کو انتہائی متعصب قراردیتے ہوئے اس بات کا عندیہ دیا کہ اے پی ایم ایس او اس بل کے خلاف ملک بھر میں احتجاج کریگی ۔انھوں نے اساتذہ کرام اور طلباء سے مطالبہ کیا کے و ہ سندھ کی تقسیم کے اس عمل کے خلاف بھر پور صدائے احتجاج بلند کریں اور پاکستان کے مستقبل کو تاریک ہونے سے بچائیں۔اس موقع پر اے پی ایم ایس اوکے جوائنٹ سیکریٹری عادل خان ، مرکزی کابینہ کے رکن احمر فلسطینی اور ذمہ داران و کارکنان کی بڑی تعداد موجو د تھی ۔بعد ازاں عادل خان نے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین نے ہمیشہ حق اور سچ کی بات کی ہے اور یہی وجہ ہے کہ ان کے کارکنان باطل پرست قوتوں کے خلاف پر عزم ہیں ،آج قائد تحریک کا نظریہ ملک بھر کے غریب و متوسط طبقے تک پہنچ رہا ہے اور لوگ جوق درجوق اس تحریک میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ ماضی میں بھی حق پرستوں کو دبانے کی تمام تر سازشیں نا کام ہوئی تھیں اور انشاء اللہ آئندہ بھی ظالم قوتیں نا مراد ہوں گی ۔ انھوں نے کارکنان کو تلقین کی کہ وہ اپنی تعلیم کے حصول پر بھر پور توجہ دیں اساتذہ کرام اور بزرگوں کا احترام کریں اور قائد کے نظریے کو عام طالبعلموں میں احسن طریقے سے عام کریں وہ دن دور نہیں جب ملک کے ہر کونے میں حق پرستی کا پرچم لہرائے گا۔

12/5/2016 12:32:29 PM