Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

وزارت داخلہ نے ’’مہاجر ری پبلکن آرمی‘‘ کا شوشہ چھوڑ کر کراچی کے عوام پر جھوٹا اور بیہودہ الزام عائد کرنے کی کوشش کی ہے، حق پرست اراکین سندھ اسمبلی


وزارت داخلہ نے ’’مہاجر ری پبلکن آرمی‘‘ کا شوشہ چھوڑ کر کراچی کے عوام پر جھوٹا اور بیہودہ الزام عائد کرنے کی کوشش کی ہے، حق پرست اراکین سندھ اسمبلی
 Posted on: 9/1/2013 1
’’مہاجر ری پبلکن آرمی‘‘ کا شوشہ چھوڑنے سے شہر کراچی کے عوام میں تشویش کا پایا جانا فطری عمل ہے، اراکین سندھ اسمبلی
چیف جسٹس، کراچی اور اس کے عوام پر بیہودہ اور جھوٹے الزامات عائد کرنے والوں کا محاسبہ کریں، اراکین سندھ اسمبلی ایم کیوایم

کراچی ۔۔۔یکم ، ستمبر2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے حق پرست اراکین سندھ اسمبلی نے وزارت داخلہ کی جانب سے ’’مہاجر ری پبلکن آرمی ‘‘ کا شوشہ چھوڑنے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی منی پاکستان ہے اور منی پاکستان کے خلاف کسی بھی سطح پر کوئی سازش کی جائے گی تو ماضی اس بات کا گواہ ہے کہ سازشوں کے تانے بانے بننے والوں کو ہی ہمیشہ ناکامی اور شرم کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہاکہ وزارت داخلہ کے حکام کو ’’مہاجر ری پبلکن آرمی ‘‘ جیسا کوئی شوشہ چھوڑنے سے قبل 19، جون 1992ء کو ایم کیوایم پر لگائے گئے جھوٹے اور بے بنیاد جناح پور کے الزام کی حقیقت کو جان لینا چاہئے تھا۔انہوں نے کہاکہ زمینی حقائق کے مطابق کراچی میں مہاجر وں کی آبادی ملک میں بسنے والی دیگر قومیتوں کے مقابلے میں زیادہ ہے اور کراچی اس وقت حکومت سندھ کی دہشت گردوں کو حاصل سرپرستی کے باعث بدامنی ، قتل و غارتگری اور بھتہ خوری کی دلدل میں دھنسا ہوا ہے اور دہشتگردوں کی روزانہ کی بنیاد پر سفاکانہ کاروائیوں میں دیگر قومیتوں کے ساتھ ساتھ مہاجر اکثریت سے نشانہ بن رہے ہیں اور اس حقیقت کے باوجود وزارت داخلہ کی جانب سے ’’مہاجر ری پبلکن آرمی ‘‘ کا شوشہ چھوڑنے سے شہر کراچی کے عوام میں تشویش کا پایا جانا فطری عمل ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کے باشعور عوام کو 19جون 1992ء کا بد ترین ریاستی آپریشن یاد ہے جسے اس وقت کی حکومت نے جرائم پیشہ افراد کے نام پر شروع کیا اور اس کا رخ اردو بولنے والوں کی نمائندہ جماعت ایم کیوایم کی طرف موڑ دیا تھا ۔انہوں نے کہاکہ وزارت داخلہ کے حکام نے ’’مہاجر ری پبلکن آرمی ‘‘کا شوشہ چھوڑ کر ایک مرتبہ پھر کراچی کے عوام پر جھوٹا اور بیہودہ الزام عائد کرنے کی کوشش کی ہے ۔ حق پرست اراکین سندھ اسمبلی نے چیف جسٹس آف پاکستان افتخار محمد چوہدری سے اپیل کی کہ وہ ’’مہاجر ری پبلکن آرمی ‘‘ کے شوشے کا سنجیدگی سے نوٹس لیں اور کراچی اور اس کے عوام پر بیہودہ اور جھوٹے الزامات عائد کرنے والوں کا محاسبہ کریں ۔


12/6/2016 11:59:54 AM