Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

وسیم دہلوی کا پولیس حراست میں بہیمانہ تشد د کے بعد قتل کارکنان پر ظلم و ستم کے سلسلے کی کڑی ہے ، ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی


وسیم دہلوی کا پولیس حراست میں بہیمانہ تشد د کے بعد قتل کارکنان پر ظلم و ستم کے سلسلے کی کڑی ہے ، ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی
 Posted on: 6/4/2015 1
وسیم دہلوی کا پولیس حراست میں بہیمانہ تشد د کے بعد قتل کارکنان پر ظلم و ستم کے سلسلے کی کڑی ہے ، ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی
کراچی میں سندھ پولیس کے افسران نے اپنے ذاتی ڈیتھ اسکواڈز بنا رکھے ہیں
حالیہ کراچی آپریشن میں ایم کیوا یم کے 40کارکنان کو ماورائے عدالت شہید کیا گیا ہے جبکہ تقریباً 92کارکنان لاپتہ ہیں 
سپریم کورٹ کے حاضر سروس ججوں پر مشتمل کمیشن فوری تشکیل دیا جائے جو کارکنان او ر عام شہریوں کی شنوائی کرے
رابطہ کمیٹی کی شہید وسیم دہلوی کے ایصال ثواب کیلئے منعقدہ قرآن خوانی و فاتحہ خوانی کے اجتماع کے بعد پریس بریفنگ
کراچی۔۔۔4جون2015ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہاہے کہ ایم کیو ایم کے کارکن وسیم دہلوی پر دوران حراست پولیس کا بہیمانہ تشدد گزشتہ دو دہائیو ں سے ایم کیو ایم کے کارکنان کے ماورائے عدالت قتل ، غیر قانونی گرفتاریوں اور دیگر مظالم کے سلسلے کی کڑی ہے،کراچی میں سندھ پولیس کے افسران نے اپنے ذاتی ڈیتھ اسکواڈز بنا رکھے ہیں جو کراچی میں ایم کیو ایم کے کارکنان اور عام شہریوں کوبلاجواز گرفتار کرکے ان پر انسانیت سوز تشدد اور رہائی کے عیوض انکے اہل خانہ سے کروڑوں روپے وصول کرتے ہیں اور نہ دینے پر انہیں جھوٹے مقدمات میں ملوث کردیاجاتاہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پولیس کی حراست میں بہیمانہ تشدد سے شہید ہونیوالے کارکن وسیم دہلوی کے ایصال ثواب کیلئے لال قلعہ گراؤنڈ میں منعقدہ قرآن خوانی و فاتحہ خوانی کے اختتام پر اراکین رابطہ کمیٹی کے ہمراہ پریس بریفنگ کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ وسیم دہلوی کی بہیمانہ تشدد سے شہادت نے سندھ پولیس کے متعلق ایم کیوایم کے تمام خدشات کو درست ثابت کردیاہے،حالیہ کراچی آپریشن میں ایم کیوا یم کے 40کارکنان کو ماورائے عدالت شہید کیا گیا ہے جبکہ تقریباً 92کارکنان کو غیر قانونی طور پر سادہ لباس اہلکاروں نے گرفتار کرکے لاپتہ کیا ہے اور آج تک انکے اہل خانہ کو انکی کوئی خیر خبر نہیں ہے لیکن ہمارے کارکنا ن کو انصاف فراہم کرنے کیلئے کوئی اقدام نہیں اُٹھایا گیا۔انہوں نے کہا کہ ایم کیوا یم نے کراچی آپریشن کا مطالبہ کیا تھا تاکہ بلا تفریق تمام دہشت گردوں اور کالعدم جماعتوں کے خلاف کارروائیاں کی جائیں لیکن ماضی کی طرح اس مرتبہ بھی کراچی آپریشن کا رخ ایم کیوا یم کے کارکنان اور اُردو بولنے والوں کی جانب موڑ کر انکا استحصال کیا جارہاہے،انہوں نے کہا کہ کراچی کو منی پاکستان کہا جاتا ہے اور ملک بھر کے تمام قومیتوں اور زبانوں سے تعلق رکھنے والے لوگ اس شہر میں بستے ہیں لیکن کراچی آپریشن میں صرف اُردو بولنے والوں کو گرفتار کیا جارہاہے تو کیا شہر کے تمام جرائم اور امن کی خرابی کے پیچھے صرف اُردو بولنے والوں اور ایم کیو ایم کا کردارہے؟،جب کراچی پولیس نے سانحہ صفورا کے مجرمان کو گرفتارکرکے اچھی کارکردگی دکھائی تو جناب الطاف حسین اور ایم کیو ایم نے پولیس کے کردار کی تعریف بھی کی ہے۔ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے مطالبہ کیا کہ سپریم کورٹ کے حاضر سروس ججوں پر مشتمل کمیشن تشکیل دیا جائے تاکہ ایم کیو ایم کے لاپتہ کارکنان سمیت عام شہری بھی سندھ پولیس کے متعصب کردار سے متعلق اپنے خدشات کا اظہار کر سکیں ۔انہوں نے کہا کہ حکمران ہماری دہائیوں کا نوٹس لیں اور کراچی کے شہریوں کے ساتھ ظلم و ستم کا رویہ ترک کردیں کہیں ایسانہ ہو کہ شہریوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوجائے اور وہ جناب الطاف حسین کے امن و محبت کے فلسفے پر عمل کر نا چھوڑ دیں ۔انہوں نے یوم سوگ کے موقع پر کراچی سمیت ملک بھر میںیوم سوگ میں شریک ہونیوالے تاجر وں اور عوام کا شکریہ بھی ادا کیا۔

9/26/2016 7:11:07 PM