Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

خیبرپختونخوا کی اسمبلی میں قائد تحریک الطاف حسین کی تقریر کے خلاف مذمتی قرارداد قابل مذمت ہے۔رابطہ کمیٹی


خیبرپختونخوا کی اسمبلی میں قائد تحریک الطاف حسین کی تقریر کے خلاف مذمتی قرارداد قابل مذمت ہے۔رابطہ کمیٹی
 Posted on: 5/4/2015 1
خیبرپختونخوا کی اسمبلی میں قائد تحریک الطاف حسین کی تقریر کے خلاف مذمتی قرارداد قابل مذمت ہے۔رابطہ کمیٹی
خیبرپختونخوا اسمبلی کے ار کان کوواقعی فوج سے کوئی ہمدردی ہوتی تووہ سب سے پہلے عمران خان کے خلاف قراردادمذمت پیش کرتے جنہوں نے فوج کے جرنیلوں کو بزدل کہااوران کی تقریر ریکارڈپر موجود ہے
خیبرپختونخوا اسمبلی کے ارکان، منورحسن کے خلاف قراردادلاتے جنہوں نے اپنی تقریر اورانٹرویومیں مسلح افواج کے بارے میں توہین آمیز خیالات کااظہار کیا
خیبرپختونخوا کے ار کان اسمبلی کو فوج سے ہمدردی ہوتی تو وہ طالبان کے خلاف آوازبلندکرتے جنہوں نے جرنیلوں کو شہید کیا ، فوج اورایف سی کے افسروں اورجوانوں کے گلے کاٹے ، انکے سروں سے فٹبال کھیلی
تحریک انصاف اورجماعت اسلامی کے ارکان تو فوج کے افسران اور جوانوں کے گلے کاٹنے والے طالبان دہشت گردوں کی کھلے عام حمایت کرتے رہے
خیبرپختونخوا کے ارکان اسمبلی کاواویلا صرف اور صرف ایم کیوایم اورمہاجروں سے نفرت اورتعصب کی بنیادپرہے
کراچی۔۔۔ 4، مئی2015ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے اراکین نے صوبہ خیبرپختونخوا کی اسمبلی میں قائد تحریک جناب الطاف حسین کی تقریر کے خلاف مذمتی قرارداد کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخوا اسمبلی کے ار کان کوواقعی فوج سے کوئی ہمدردی ہوتی تووہ سب سے پہلے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے خلاف قراردادمذمت پیش کرتے جنہوں نے فوج کے جرنیلوں کو بزدل کہااوران کی تقریروڈیو کی صورت میں ریکارڈپر موجود ہے جس میں انہوں نے یہاں تک کہاہے کہ ’’ 20 ہزار لوگ سڑکوں پر نکل جائیں تو ان جرنیلوں کا پیشاب نکل جائے گا‘‘ ۔خیبرپختونخوا اسمبلی کے ارکان، جماعت اسلامی کے سابق امیرمنورحسن کے خلاف قراردادلاتے جنہوں نے اپنی تقریر اورانٹرویومیں مسلح افواج کے بارے میں توہین آمیز خیالات کااظہار کیا ۔ اگر خیبرپختونخوا اسمبلی کے ارکان میں زرہ برابر بھی غیر ت ہوتی تو وہ سب سے پہلے عمران خان ، منورحسن اور طالبان دہشت گردوں کے خلاف قرارداد مذمت پیش کرتے۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ تحریک انصاف کے ار کان اسمبلی میں اگرذرہ برابربھی غیرت اور مسلح افواج سے ہمدردی ہوتی تو وہ طالبان دہشت گردوں کے خلاف آوازبلندکرتے جنہوں نے پاک فوج کے جرنیلوں کو شہید کیا ، جنہوں نے پاک فوج اورایف سی کے افسروں اورجوانوں کے گلے کاٹے ، انکے سروں سے فٹبال کھیلی ، جنہوں نے طالبات کے اسکولوں کودھماکے سے اڑایا، جن سفاک دہشت گردوں نے ملالہ یوسف زئی اوران جیسی معصوم طالبات کوخون میں نہلایا، جنہوں نے مساجد، امام بارگاہوں، اسکولوں اورسول وفوجی تنصیبات پر بم دھماکے اورخود کش حملے کیے لیکن خیبرپختونخوا کے ا رکان اسمبلی کو فوج کو دہشت گردی کانشانہ بنانے والے طالبان دہشت گردوں کے خلاف قرارداد مذمت پیش کرنے کی ہمت نہیں ہوئی بلکہ تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کے ارکان تو فوج کے افسران اور جوانوں کے گلے کاٹنے والے طالبان دہشت گردوں کی کھلے عام حمایت کرتے رہے۔ ان کے اس دوغلے طرزعمل سے صاف ظاہر ہے کہ انہیں فوج کی عزت ووقارسے کوئی دلچسپی نہیں بلکہ ان کاواویلا صرف اور صرف ایم کیوایم اور مہاجروں سے نفرت اورتعصب کی بنیادپرہے۔رابطہ کمیٹی نے کہاکہ خان غفار خان المعروف باچہ خان جو عدم تشدد کے داعی تھے اور قائد تحریک جناب الطاف حسین باچاخان کے عدم تشددفکروفلسفہ کے تحت جدوجہد کررہے لیکن آج خیبرپختونخوا اسمبلی نے قائدتحریک جناب الطا ف حسین کے خلاف مذمتی قرارداد منظور کرکے باچاخان اور خان ولی خان کی روحوں اورصوبہ کے عوام کو شرمندہ کردیا ہے ۔ 


12/9/2016 1:20:26 PM