Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

پاکستان میں ایساانقلاب چاہتے ہیں جس میں چندخاندانوں کی حکمرانی کاخاتمہ ہو اور 18کروڑ عوام کی حکمرانی قائم ہو۔ الطاف حسین


 Posted on: 1/31/2013
پاکستان میں ایساانقلاب چاہتے ہیں جس میں چندخاندانوں کی حکمرانی کاخاتمہ ہو اور 18کروڑ عوام کی حکمرانی قائم ہو۔ الطاف حسین 
اب بڑی بڑی جاگیروں،چھوٹے چھوٹے راجواڑوں اورریاستوں کے توڑنے کاوقت آگیاہے
ان ریاستوں اور راجواڑوں کوختم نہیں کیاگیاتویہ جاگیردارباقیماندہ پاکستان کوبھی ختم کردیں گے
آج بھی اس بات پر قائم ہوں کہ 1948ء میں قائداعظم کوایک گھناؤنی سازش کے تحت قتل کیاگیا
ملک میں ایم کیوایم کاانقلاب آیاتو بڑی بڑی جاگیروں کواسپتالوں اور اسکولوں میں تبدیل کیاجائیگا،سارالوٹاہواخزانہ سرکاری خزانے میں ڈالاجائے گا
سینٹرل پنجاب کے تنظیمی سیٹ اپ کی تشکیل نوکے اعلان کے موقع پرپنجاب ہاؤس لاہورمیں ذمہ داروں کے اجتماع سے خطاب
لاہور۔۔۔31 جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائدجناب الطاف حسین نے کہاہے کہ ہم پاکستان میں ایساانقلاب چاہتے ہیں جس میں چندخاندانوں کی حکمرانی کاخاتمہ ہو اور ملک پر 18کروڑ عوام کی حکمرانی قائم ہو۔ اب بڑی بڑی جاگیروں،چھوٹے چھوٹے راجواڑوں اورریاستوں کے توڑنے کاوقت آگیاہے۔ان ریاستوں اور راجواڑوں کوختم نہیں کیاگیاتویہ جاگیردارباقیماندہ پاکستان کوبھی ختم کردیں گے۔انہوں نے یہ بات آج سینٹرل پنجاب کے تنظیمی سیٹ اپ کی تشکیل نوکے اعلان کے موقع پرپنجاب ہاؤس لاہورمیں ایم کیوایم کے ذمہ داروں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجتماع میں اراکین رابطہ کمیٹی اورسینٹرل ایگزیکٹوکونسل کے ارکان بھی موجود تھے ۔ اجتماع سے اپنے خطاب میں جناب الطاف حسین نے کہاکہ پوراپنجاب برادریوں اوربڑے بڑے جاگیرداروں اور زمینداروں کی جاگیروں میں بٹ گیاہے،بظاہر پاکستان اورپاکستان کے عوام آزادہیں لیکن اگرحقائق کی عینک لگاکردیکھاجائے توچندخاندانوں کے علاوہ پورے پاکستان کے عوام غلام نظرآئیں گے۔انہوں نے کہاکہ 1947ء میں قائداعظم کے زمانے ہی میں ان کے خلاف سازشیں شروع کردی گئی تھیں ، میں آج بھی اس بات پر قائم ہوں کہ 1948ء میں قائداعظم کوایک گھناؤنی سازش کے تحت قتل کیاگیا۔اسکے بعد قائداعظم کے دست راست اور ملک کے پہلے وزیراعظم خان لیاقت علی خان کوراولپنڈی کے بھرے جلسہ میں گولی مارکرشہیدکردیاگیا۔ اسکے بعدملک پر انگریزوں کے ایجنٹوں چوروں، ڈاکوؤں نے ملک پر قبضہ کرکے عوا م کوغلام بنالیااورعلامہ اقبال نے پاکستان کیلئے جوخواب دیکھاتھاوہ چکناچورہوگیا۔انہوں نے کہاکہ آج پنجاب کے کسی بھی حصہ سے تعلق رکھنے والے شہری ہوں وہ مراعات یافتہ طبقہ کے چندخاندانوں اوران کی اولادوں کوووٹ دینے پرمجبورہوتے ہیں، ان میں اتنی ہمت وسکت نہیں ہوتی کہ وہ بھی اس بات کاکھل کرعملی اظہارکرسکیں کہ وہ بھی انسان ہیں اورانہیں بھی ا پنی مرضی استعمال کرنے کا پوراحق حاصل ہے،غریب ومتوسط طبقہ کے ان عوام میں اتنی جرات نہیں ہوتی کہ وہ بھی اپناایک گروپ بناکر اپناکوئی امیدوارکھڑاکرسکیں اورا س کوکامیاب کرائیں۔لیکن مصیبت یہ ہے کہ جوبھی اٹھے گااس کوانتقام کانشانہ بنایاجائے گا۔اسکے خلاف پرچے کٹیں گے اوراسے اوراسکے خاندان کوجیلوں میں ٹھونس دیاجائے گا۔انہوں نے حاظرین کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ آج آپ کویہ عہدکرناہوگاکہ آپ کوغلاموں کی طرح نہیں رہناہے بلکہ اپنے بزرگوں کے بنائے ہوئے ملک کوقائم رکھنا ہے، اسے خوشحال بناناہے ، ترقی اوراستحکام دینا ہے ۔یہ ایک آدمی کے کرنے کی بات نہیں ہے لیکن اگرہمت کی جائے توآپ یہ کرسکتے ہیں، الطاف حسین کی مثال آپکے سامنے ہے ، جس نے کراچی یونیورسٹی سے اپناسفرشروع کیااورآج اسکے کروڑوں فالوورہیں۔جناب الطا ف حسین نے کہاکہ پورے ملک کے عوام مہنگائی، پیٹرول ، بجلی گیس کے بحران کی وجہ سے تنگ ہیں، غربت ، بیروزگاری کی وجہ سے خودکشی کرنے اوراپنے بچے بیچنے پر مجبورہوگئے ہیں۔ اس سے نجات حاصل کرنے کیلئے ضروری ہے کہ ہم آزمائے ہوئے لوگوں کے پیچھے نہ بھاگیں۔انہوں نے کہاکہ جب جب ایم کیوایم نے پنجاب میں قدم رکھا اورآگے بڑھنے لگی توایک سازش کے تحت فساد یادہشت گردی کاکوئی نہ کوئی واقعہ کرواکر ایم کیوایم کووہیں مصروف کردیاگیالیکن اب ایم کیوایم کوکسی سازش کے ذریعے روکانہیں جاسکتااوراب وہ وقت دورنہیں کہ انقلاب کاعملی آغاز اب کسی اورصوبہ سے نہیں بلکہ صوبہ پنجاب سے ہوگا۔جناب الطا ف حسین نے کہا کہ ٹی وی ٹاک شوزمیں اکثرشرکاء کہتے ہیں کہ جمہوریت ڈھیلی ڈھالی، لولی لنگڑی جیسی بھی ہوجمہوریت کی گاڑی چلتی رہنی چاہیے ۔انہوں نے سوال کیا کہ آخر کونسی جمہوریت کی بات کی جارہی ہے؟پاکستان میں تو موروثی اورخاندانی نظام ہے ، باپ کے بعدبیٹاپوتا، ناناکے بعدبیٹی،نواسی، چچابھتیجایہی چند خاندان پلٹ پلٹ کرآتاہے۔ پاکستان کی آبادی 18کروڑہے لیکن چندخاندان حکمران ہیں۔الطاف حسین چاہتاہے کہ ملک میں ایساانقلاب آئے کہ چند خاندانوں کی حکمرانی کاخاتمہ ہو اور18کروڑعوام کی حکمرانی قائم ہو۔ انہوں نے کہاکہ ا ب بڑی بڑی جاگیروں،چھوٹے چھوٹے راجواڑوں اور ریاستوں کے توڑنے کاوقت آگیاہے۔ان ریاستوں اور راجواڑوں کوختم نہیں کیاگیاتویہ جاگیردارباقیماندہ پاکستان کوبھی ختم کردیں گے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں الطاف حسین کے سواکوئی اورایسالیڈرنہیں کہ جس نے آج تک نہ خودالیکشن لڑاہواورنہ ہی اسکے خاندان کے افرادنے الیکشن لڑاہو۔الطاف حسین کو اپنے لئے کچھ نہیں چاہیے بلکہ اسے صرف ملک کی بقاوسلامتی اورعوام کی خوشحالی چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں امیروں کے بچوں کیلئے اعلیٰ معیارکے الگ اسکول ہیں جبکہ غریبوں کے بچوں کیلئے الگ اسکول ہیں، ہم اس دوہرے نظام تعلیم کوختم کرکے ایسایکساں نظام تعلیم قائم کریں گے کہ جہاں امیرغریب سب کے بچوں کومیرٹ کی بنیادپر داخلے مل سکیں۔ ہمارے ہاں اسکولوں کی طرح ا میروں کیلئے جدید اسپتال بھی الگ ہیں جبکہ غریبوں کیلئے ایسے سرکاری اسپتال ہیں جہاں چوہے ، بلی کتے پھرتے ہیں۔پورے ملک میں ایم کیوایم کاانقلاب آیاتوریاست بڑی بڑی جاگیروں کواسپتالوں اور اسکولوں میں تبدیل کرے گی اورسارالوٹاہواخزانہ سرکاری خزانے میں ڈالاجائے گا۔اس کے چوکیدارایسے مضبوط لوگ ہوں گے جوایک پائی کسی کولوٹنے نہیں دیں گے۔لوٹ مار،کرپشن اورکمیشن کھانے والوں کو عبرتناک سزائیں مقررکی جائیں گی اورجاگیردارانہ نظام ختم کرکے انصاف کاایسانظام قائم کریں گے کہ امیرغریب ہرکسی کوانصاف ملے گا۔ جناب الطا ف حسین نے ایم کیوایم کے ذمہ داروں کومخاطب کرتے ہوئے کہاکہ آپ تیارہوجائیں ہم مینار پاکستان لاہورپرتاریخی جلسہ عام منعقدکریں گے۔ انہوں نے سینٹرل پنجاب کے نومنتخب عہدیداروں کوتلقین کی کہ وہ اپنے فرائض ایمانداری اوردیانتداری سے انجام دیں اوراپنی عہدوں کو ذاتی مفادکیلئے ہرگزاستعمال نہ کریں۔ 
 
کراچی میں تین علماء کرام کے قتل سمیت بڑھتی ہوئی دہشت گردی کی کاروائیوں کا فی الفورنوٹس لیاجائے،الطاف حسین
دیگر امور سے توجہ ہٹا کر ساری کی ساری توجہ دہشت گردوں کی گرفتاری پر لگا دی جائے
اگر حکومت کسی دشواری و رکاوٹ کا شکار ہے یا سیکورٹی اداروں کے تعاؤن نہ کرنے کی شکایت ہے تو بہادروں کی طرح میڈیا کے ذریعے قوم کو آگا ہ کر یں،الطا ف حسین
ایم کیوایم پنجاب ہاوس لاہور کے تنظیمی ذمہ دار ان کے اجتما ع سے خطاب
لندن ۔۔31جنوری 2013ء 
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے کراچی میں دہشت گردو ں کی فائرنگ کے نتیجے میں تین علماء کرام کے قتل ہونے کے واقعہ پر شدید مذمت کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ واقعہ میں ملوث دہشت گرد عناصر کو فی الفور گرفتار کر کے سخت سے سخت سز ا دی جائے ۔یہ مطالبہ انہوں نے لاہور میں سینٹر ل پنجاب کے تنظیمی سیٹ اپ کی تشکیل نوکے اعلان کے موقع پر ایم کیوایم پنجاب ہاوس لاہور کے تنظیمی ذمہ دار ان کے اجتما ع سے خطاب کے دوران کیا ۔جناب الطاف حسین نے شہید ہونے والے تینوں علما ء کرام کے سوگوار اہل خانہ ،مدرسہ کے طالب علموں اور عقیدت مندوں سے دلی تعزیت کر تے ہوئے شہید ہونے والے علماء کرام کی مغفر ت اور سوگواران کیلئے صبر جمیل کی دعا کی ۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں دن دیہاڑے تین علما ء کرام کومسلح دہشت گرد وں نے بے دردی سے قتل کر دیا اور ہمیشہ کی طرح قاتل باآسانی نہ صرف فرار ہوگئے بلکہ وہ شہر میں آزادانہ طور پر دنددناتے پھر رہے ہیں اور انہیں گرفتار کرنے والا کوئی نہیں ہے ۔جناب الطاف حسین نے کہا کہ شہر بھر میں دن بدن دہشت گردی کی وارداتیں بڑھتی جارہی ہیں جس کی وجہ سے عوا م میں شدید غم وغصہ پایا جارہا ہے لہٰذا حکومت کو چاہئے کہ دیگر امور سے توجہ ہٹا کر ساری کی ساری توجہ دہشت گردوں کی گرفتاری پر لگا دی جائے ،اگر حکومت کسی دشواری و رکاوٹ کا شکار ہے یا سیکورٹی اداروں کے تعاؤن نہ کرنے کی شکایت ہے تو بہادروں کی طرح میڈیا کے ذریعے قوم کو آگا ہ کر یں تاکہ دہشت گردی کی ان بڑھتی ہوئی وارداتوں کو روکا جاسکے ۔جناب الطاف حسین نے صدر پاکستان آصف علی زرداری ،وزیر اعظم پاکستان راجہ پر ویز اشرف ،وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک ،اور دیگر سیکورٹی اہلکار وں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کراچی میں تین علماء کرام کے قتل سمیت بڑھتی ہوئی دہشت گردی کی کاروائیوں کا فی الفورنوٹس لیاجائے اور قتل و غارتگری کے واقعات میں ملوث دہشت گر د و اور ان کے سرپرستوں کو گرفتار کر کے قانون کے مطابق سخت سے سخت سزادی جائے ۔ 
 
اسلام آباد میں ایم کیوایم کے تنظیمی کا م کیلئے دفتر کے قیام کیلئے مخیر حضرات دل کھول کر عطیات جمع کر ائیں ، الطاف حسین 
طاہر ہ آصف نے 500گز کا پلاٹ دینے کا اعلان کردیا ، محترمہ بسمہ آصف اور شاہین انورگیلانی کا ایک ایک لاکھ جبکہ ڈاکٹر شہزاد شمسی کی جانب سے پچاس ہزار روپے دینے کا اعلان 
ایم کیوایم پنجاب کے مختلف ضلعی عہدیداران ذمہ داران وکارکنان اور عوام کی جانب سے بھی بھاری مالی امداد دینے کا اعلان 
ایم کیوایم پنجاب ہاوس لاہور کے تنظیمی ذمہ دار ان کے اجتما ع سے خطاب کے دوران اپیل
لندن ۔۔31جنوری 2013ء 
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے لاہور میں سینٹر ل پنجاب کے تنظیمی سیٹ اپ کی تشکیل نوکے اعلان کے موقع پر ایم کیوایم پنجاب ہاوس لاہور کے تنظیمی ذمہ دار ان کے اجتما ع سے خطاب کے دوران اسلام آباد میں ایم کیوایم کے دفتر کے قیام کیلئے مخیر حضرات ،ایم کیوایم پنجاب کے ذمہ داران و کارکنان اور عوام سے اپیل کی وہ اس سلسلے میں مالی معاونت کریں جس پر حاضر ین نے دل کھو ل کر عطایات دینے کا اعلان کیا ۔ اعلان کرنے والوں میں ایم کیوایم سینٹر ل ایگزیکٹو کونسل کے ارکان اورپنجاب کے ضلعی عہدیداران مختلف ذمہ داران و عہدیداران شامل ہیں جن میں طاہر ہ آصف نے اسلام آباد میں 500گزکا پلاٹ ، محترمہ بسمہ آصف ایک لاکھ ، شاہین انورگیلانی ایک لاکھ ، ڈاکٹر شہزاد شمسی پچاس ہزار، محمد سعد آرائیں مرید کے پچیس ہزار مزمل بخاری بیس ہزار اورمبین قاضی نے دس ہزار روپے دینے کا اعلان کیا۔ایم کیوایم اسلام آباد میں دفتر کے قیام کیلئے دل کھول کر عطیات دینے پر جناب الطاف حسین نے شکریہ اداکیا اور دعائیں دی ۔
 
ایم کیو ایم پاکستان کی واحد جماعت ہے جس نے متوسط طبقہ سے جنم لیا، اس کی لیڈر شپ میں کوئی جاگیردار وڈیرہ ، یا سردار شامل نہیں ، ڈاکٹر فاروق ستار
تنظیم نو کے مطابق سینٹرل پنجاب کے صدر سید شاہین انور گیلانی ، سینئر صدورمبین قاضی، کرنل ایل کے ٹریسلر، ڈاکٹر شہزاد علی شمسی، طاہرہ آصف، بسمہ آصف ، جنرل سیکریٹری ملک وسیم کھوکھر
سینٹرل پنجاب13 ڈسٹرکٹ پر مشتمل ہو گا جن میں لاہور،سیالکوٹ، ساہیوال، حافظ آباد سمیت دیگر اضلاع شامل ہیں 
لاہور:۔۔۔۔31 جنوری2013
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار نے تنظیم نو کے سلسلے میں ایم کیو ایم سینٹرل پنجاب کی 24 رکنی کمیٹی کے ناموں کا اعلان کر دیا۔ یہ اعلان انہوں نے جمعرات کے روز ایم کیو ایم پنجاب ہاؤس واقع نیو مسلم ٹاؤن لاہور کے قریب گراؤنڈ میں منعقدہ ذمہ داران و کارکنان کے اجلاس سے کیا۔ اس موقع پر ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے رکن سیف یار خان سمیت دیگر ذمہ داران و کارکنان بھی موجود تھے۔ سینٹرل پنجاب کمیٹی کی تنظیم نو کے مطابق کمیٹی کے صدر سید شاہین انور گیلانی ، سینئر نائب صدور مبین قاضی ایڈووکیٹ ، کرنل ایل کے ٹریسلر، ڈاکٹر شہزاد علی شمسی، طاہرہ آصف، بسمہ آصف، جنرل سیکریٹری ملک وسیم کھوکھر، سینئر جوائنٹ سیکریٹری طاہر محمود، جوائنٹ سیکریٹریز پروین اختر، چوہدری عابد گجر، عبدالکریم ٹوکے خان ، سیکریٹری اطلاعات فیصل فجاج ڈار، ڈپٹی سیکریٹری اطلاعات خرم شہزاد رانا، فنانس سیکریٹری ہاشم رضا، رابطہ سیکریٹری ساجد سبزواری ، آفس سیکریٹری لعل حسین قریشی جبکہ اراکین میں محمد علی جواد ، ڈاکٹر عبدالغفار، ناصر گجر ، ڈاکٹر افتخار بخاری، بشیر احمد خان، ڈاکٹر اے آر رحمن رانا، شیراز بیگ اور آغا محمد علی خان (آغا جانی) شامل ہیں۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان کی واحد جماعت ہے جس نے متوسط طبقہ سے جنم لیا اور اس کی لیڈر شپ میں کوئی جاگیردار ، وڈیرہ یا سردار شامل نہیں ۔انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان سے کرپٹ پولیٹیکل کلچر اور اسٹیٹس کو کا خاتمہ چاہتی ہے اسی لئے جب بھی ایم کیو ایم نے اپنی جدوجہد کا دائرہ ملک گیر سطح پر بڑھانے کی کوشش کی تو اسٹیبلسمنٹ کے وہ وناصر جو ملک سے اسٹیٹس کو اور کرپٹ فیوڈل پولیٹیکل کلچر کا خاتمہ نہیں چاہتے اور جن کا کرپٹ جاگیرداروں اور وڈیروں سے گٹھ جوڑ ہے انہوں نے ہمیشہ مختلف ہتھکنڈوں سے ایم کیو ایم کا راستہ روکنے کی کوشش کی اور عوام کو ایم کیو ایم سے بدظن کرنے کے لئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کئے گئے لیکن یہ ایم کیو ایم کے پیغام اور قائد تحریک الطاف حسین کے فکروفلسفہ کی سچائی ہے کہ تمام تر سازشوں کے باجود ایم کیو ایم کو ختم نہیں کیا جا سکا اور ایم کیو ایم کا پیغام کراچی سے نکل کر اندرون سندھ، پنجاب، بلوچستان ، خیبرپختونخواہ، آزاد کشمیر، گلگت بلتستان اور قبائلی علاقوں سمیت ملک کے چپہ چپہ میں پھیل رہا ہے۔قبل ازیں ڈاکٹر فاروق ستارنے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ ایم کیو ایم سینٹرل پنجاب 13 اضلاع پر مشتمل ہو گا جن میں لاہور ، شیخوپورہ، ننکانہ صاحب، قصور ، اوکاڑہ ، گوجرانوالہ ، پاکپتن، حافظ آباد، منڈی بہاؤالدین، گجرات، سیالکوٹ ، نارووال اور ساہیوال شامل ہیں۔
 
نامعلوم دہشت گردوں کی فائرنگ سے جامع فاروقیہ کے علمائے کرام اور شہر میں دیگر واقعات میں جاں بحق ہونے والے افراد پرالطاف حسین کا اظہار مذمت۔
یہ واقعات شہرکا امن تباہ کرنے کی سازش ہیں، جناب الطاف حسین
لندن۔۔۔31،جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جنا ب الطاف حسین نے کراچی میں نامعلوم دہشت گردوں کی فائرنگ سے جامع فاروقیہ کے علمائے کرام اور شہرمیں دیگر واقعا ت میں جاں بحق ہونے والے افراد پر سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور ان واقعات کو شہرکا امن تباہ کرنے کی سازش قرار دیا ہے۔ ایک بیان میں جناب الطاف حسین نے جاں بحق ہونے والے افراد کے تمام سو گوارلواحقین سے تعزیت کرتے ہوئے کہاکہ میں اورتمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اوردعاگوہیں کہ اللہ تعالیٰ جاں بحق ہونے والے تمام افراد کی مغفرت فرمائے،انہیں جنت الفردوس میں جگہ دے اورتمام لواحقین کوصبرجمیل عطاکرے۔ ۔ انہوں نے گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت االعباد اور وزیرا علیٰ سید قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا ہے کہ علمائے کرام سمیت شہر میں مختلف واقعات میں جاں بحق ہونے والے افراد کے قتل کا نوٹس لیا جائے اور شہریوں کے جان ومال کے تحفظ کے لئے ٹھوس و مثبت اقدامات بروئےکار لائےجائیں۔
 
ایم کیوایم کے قائدالطاف حسین کی امیرجماعت اشاعت توحید وسنت پاکستان مولانا محمد طیب طاہری سے ٹیلی فون پر گفتگو
اسلام امن وسلامتی کامذہب ہے،اسلام نہ صرف مسلمانوں بلکہ تمام مذاہب کے انسانوں کوامن وسلامتی کاپیغام دیتاہے۔ملک کوامن وسلامتی کاگہوارہ بنانے اوردین کی اصل روح اورتعلیمات کے فروغ کیلئے آپ کو ایم کیوایم کا تعاون جاری رہے گا۔پاکستان بڑی قربانیوں سے معرض وجود میں آیا ہے ،ہماری کوشش ہونی چاہئے کہ ہم وطن کو قائم ودائم رکھیں ۔ہماری کوشش ہونی چاہئے کہ کسی بھی مسئلہ کا آپس میں مشاورت ،اجتہاد اوراجماع کرکے حل تلاش کریں،الطاف حسین
ہم عدم تشدد کے قائل ہیں اور ہم نے ہمیشہ امن وسلامتی کادرس دیا ہے۔انشاء اللہ ایک دن آئے گا کہ پاکستان کی سلامتی میں آپ کا ہاتھ ہوگا، مولانا طیب طاہری
پاکستان اور دنیا میں امن وسلامتی کیلئے آپ کے شانہ بشانہ جدوجہد کرتے رہیں گے ۔مولانا طیب طاہری کی الطاف حسین سے گفتگو
لندن۔۔۔31،جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے معروف عالم دین اور امیرجماعت اشاعت توحید وسنت پاکستان مولانا محمد طیب طاہری کو فون کرکے ان کی خیریت دریافت کی۔دونوں رہنماؤ ں کے درمیان بات چیت انتہائی مثبت اورکامیاب رہی، بات چیت کا سلسلہ ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہا جس میں پاکستان کی سلامتی وبقاء ، ملک کی مجموعی صورتحال سمیت دیگر امور زیربحث آئے۔مولانا طیب طاہری سے گفتگو کرتے ہوئے جناب الطاف حسین نے کہاکہ اسلام امن وسلامتی کامذہب ہے،اسلام نہ صرف مسلمانوں بلکہ تمام مذاہب کے انسانوں کوامن وسلامتی کاپیغام دیتاہے۔انہوں نے سورہء فاتحہ کاحوالہ دیتے ہو ئے کہاکہ روزمحشر کا مالک اللہ تعالیٰ کی ذات ہے لہٰذااحکام خداوندی کی روشنی میں ہمیں یا کسی اور کو یہ حق نہیں پہنچتا کہ وہ کسی کے بارے میں جہنمی ہونے کا فیصلہ کرکے اسے واجب القتل قراردے۔اس بات کافیصلہ کرنے کا حق صرف اللہ تعالیٰ کو ہے کہ کون جنت میں جائے گا اورکون دوزخ میں۔انہوں نے کہاکہ بعض شرعی معاملات میں مستند امامینؒ کے درمیان اختلاف رائے ضرورتھا لیکن اس کی بنیاد پر کسی امام نے نہ توکسی کو کافر قراردیا نہ کسی کے قتل کا فتویٰ جاری کیابلکہ تمام عقائد کے ماننے والوں کے احترا م کادرس دیا،ہمیں بھی سب کااحترام کرناچاہیے ۔جناب الطاف حسین نے کہاکہ پاکستان بڑی قربانیوں سے معرض وجود میں آیا ہے ،ہماری کوشش ہونی چاہئے کہ ہم اس وطن کو نہ صرف قائم ودائم رکھیں بلکہ یہاں سنت نبویؐ اور خلفائے راشدین کی تعلیمات کی روشنی میں 21ویں صدی کے تقاضوں کے مطابق کسی بھی مسئلہ کا آپس میں مشاورت ،اجتہاد اوراجماع کرکے ایسا حل تلاش کریں کہ اختلاف کی گنجائش ہی باقی نہ رہے ۔اگر ہم اس نیک کوشش میں کامیاب ہوگئے تو نہ صرف ہمیں اللہ تعالیٰ اورسرکاردوعالم ؐ کی رضا حاصل ہوگی بلکہ ہم خلق خدا کی عملی خدمت بھی کرسکیں گے۔جناب الطاف حسین نے مزید کہاکہ میرے دادا محترم حافظ مفتی محمد رمضان ؒ مفتی شہرآگرہ اور جامعہ مسجد آگرہ کے امام اورخطیب تھے۔ایک مستند مفتی کی حیثیت سے انہوں نے مختلف مسائل پرجو فتوے تحریر فرمائے وہ آج بھی جامعہ مسجد آگرہ میں موجود ہیں ۔انہوں نے مولانا محمد طیب طاہری سے کہا کہ آپ سے بات کرکے میں روحانی خوشی محسوس کررہا ہوں،آپ اور آپکی جماعت اشاعت توحید وسنت پاکستان ،جس طرح دین کی خدمت کررہے ہیں ہم اس کی دل سے قدر کرتے ہیں، ہماری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ آپ کی ان دینی خدمات کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اورپورے ملک کوامن وسلامتی کا گہوارہ بنائے۔ انہوں نے مولانامحمدطیب طاہری کویقین دلاتے ہوئے کہاکہ ملک کوامن وسلامتی کاگہوارہ بنانے اوردین کی اصل روح اورتعلیمات کے فروغ کیلئے آپ کو ایم کیوایم کا تعاون جاری رہے گا۔مولانا محمد طیب طاہری نے اپنے والد محترم اور اپنے ادارے کی دینی خدمات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم عدم تشدد کے قائل ہیں اور ہم نے اسلحہ اورتشددکے بجائے لوگوں کو ہمیشہ امن وسلامتی کادرس دیا ہے ۔ہم کسی کے خلاف بھی اسلحہ اٹھانا نہیں چاہتے بلکہ سب کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ ہمارے ساتھ بیٹھیں تاکہ انہیں معلوم ہوسکے کہ جن مذہبی رہنماؤں کے خلاف منفی پروپیگنڈہ کیا جارہا ہے ہم ان جیسے نہیں ہیں ۔ مولانا طیب طاہری نے جناب الطاف حسین سے کہاکہ ہم انسانیت کی فلاح وبہبود اورپاکستان میں امن وسلامتی کے فروغ کیلئے کام کررہے ہیں ،اگر آپ جیسے مخلص عوامی رہنماء علمائے کرام سے مشاورت کریں تو یہ عمل نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا کیلئے امن وسلامتی کا سبب بن سکتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کی بنیادوں میں علمائے کرام کا خون شامل ہے ، ہم پاکستان اور دنیا میں امن وسلامتی کی کوششیں کررہے ہیں اور اس کارخیرمیں آپ جیسے لوگوں کے شانہ بشانہ جدوجہد کرتے رہیں گے ۔مولانا طیب طاہری نے جناب الطاف حسین کو دعا دیتے ہوئے کہاکہ اللہ تعالیٰ آپ کو خوش رکھے، اپنی حفظ وامان میں رکھے ،انشاء اللہ ایک دن آئے گا کہ پاکستان کی سلامتی میں آپ کا ہاتھ ہوگا اور ہم اس کارخیر میں آپ کے ساتھ ہونگے۔
 
علمائے کرام اور متعدد بیگناہ شہریوں کی قتل کے واقعات شہرکاامن خراب کرنے کی گھناؤنی سازش ہے،رابطہ کمیٹی 
دہشت گرد قتل و غارتگری ذریعے شہر کوعدم استحکام سے دوچار کرناچاہتے ہیں
کراچی۔۔۔31،جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے مسلح دہشت گردوں کی فائرنگ سے جامع فاروقیہ مفتی محمد صالح، مفتی عبدالمجید سمیت شہرمیں متعدد بے گناہ شہریوں کو قتل وغارتگری کانشانہ بنانے کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اوراسے شہرکاامن خراب کرنے کی گھناؤنی سازش قراردیاہے۔ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ دہشت گردشہرکاامن خراب کرنے کیلئے معصوم شہریوں،علمائے کرام اورتاجربرادری سمیت سیاسی ومذہبی جماعتوں کے کارکنان کودہشت گردی کانشانہ بنارہے ہیں تاکہ شہر میں عدم استحکام کی صورتحال پیداکی جاسکے اوراسے جوازبناکروہ اپنے مذموم مقاصدحاصل کرسکیں۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ شہر کراچی میں قتل و غارتگری میں ملوث دہشت گرد جس کسی کے بھی اشارے پر سرگرم ہیں وہ قوتیں ملک کے استحکام کے خلاف ہیں اور ملک کے کھلے دشمن ہے ۔رابطہ کمیٹی نے جامع فاروقیہ کے علمائے کرام مفتی محمدصالح اورمفتی عبدالمجیداورمعصوم شہریوں کی قتل وغارتگری کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے تمام سوگوار لواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہا رکیااور دعا کی کہ اللہ تعالیٰ تمام مقتولین کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے ۔ رابطہ کمیٹی نے صدر مملکت آصف علی زرداری ، وزیراعظم راجہ پرویز اشرف ، وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک ، گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد اور وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا کہ مسلح دہشت گردوں کی فائرنگ سے علماء کرام سمیت متعدد بے گناہ افراد کی قتل و غارتگری کا سنجیدگی سے نوٹس لیاجائے اور شہر میں امن کے قیام اور ملک کے استحکام کیلئے قتل و غارتگری میں ملوث سفاک دہشت گردوں کو گرفتار کرکے عبرتناک سزا دی جائے ۔ 
 
معروف مذہبی رہنماء اقبال مسعودکا قتل شہرکاامن خراب کرنے کی سازشوں کاتسلسل ہے،سنجیدگی سے نوٹس لیاجائے،رابطہ کمیٹی
کراچی:۔۔۔31،جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے لانڈھی کے علاقے میں نامعلوم مسلح دہشت گردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں معروف مذہبی رہنماء اقبال مسعودکے قتل کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اورقتل کی اس واردات کوشہرکاامن خراب کرنے کی گھناؤنی سازشوں کاتسلسل قراردیاہے۔ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ شہرمیں دہشت گردی اورقتل وغارت گری کے افسوسناک واقعات روزکامعمول بن چکے ہیں اور ہر روزدس سے پندرہ قیمتی انسانی جانوں کو دہشت گردی کی بھینٹ چرھایا جارہا ہے۔رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ان افسوسناک واقعات میں مختلف مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے علمائے کرام ،سیاسی ومذہبی جماعتوں کے کارکنان اور عام شہری نشانہ بن رہے ہیں۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ قتل وغارت گری کے ان واقعات کے تسلسل سے یہ واضح ہوتاہے کہ باقاعدہ سوچی سمجھی سازشوں کے تحت شہر کا امن و سکون خراب کرکے امن وامان کی صورتحال پیدا کی جارہی ہے اور معروف مذہبی رہنماء اقبال مسعودکابہیمانہ قتل بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ثابت ہوتا ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔رابطہ کمیٹی نے اقبال مسعودکے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کااظہارکرتے ہوئے دعاکی کہ اللہ تعالیٰ اقبال مسعودکوجنت الفردوس میں جگہ عطافرمائے اور انکے سوگوار لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے ۔رابطہ کمیٹی نے صدرمملکت آصف علی زرداری،وزیراعظم پاکستان راجہ پرویزاشرف،وفاقی وزیرداخلہ رحمن ملک،گورنرسندھ ڈاکٹرعشرت العباد اوروزیراعلیٰ سندھ سیدقائم علی شاہ سے پرزور مطالبہ کیاکہ کراچی کے علاقے لانڈھی میں دہشت گردوں کی جانب سے فائرنگ کرکے معروف مذہبی رہنماء اقبال مسعودکے قتل کاسنجیدگی سے نوٹس لیاجائے اورشہرمیں قتل و غارت گری کا سلسلہ جاری رکھنے والے اور امن وامان کی صورتحال کو خراب کرنے کی سازشوں میں ملوث درندہ صفت اور سفاک دہشت گردوں کوگرفتارکرکے قانون کے مطابق عبرت ناک سزا دی جائے۔ 
 
ڈاکٹر فرید ہ احمد صدیقی اور علامہ طاہر اشرفی کو اسلامی نظریاتی کونسل کے اراکین منتخب ہو نے پر رابطہ کمیٹی کی مبارکباد 
ددنوں اراکین ملک کودرپیش بحرانوں سے نکالنے کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں گے اور ملکی مفادات کو اولین ترجیح دیں گے، رابطہ کمیٹی 
کراچی :۔۔۔۔31، جنوری 2013ء 
متحد ہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے ڈاکٹر فریدہ احمد صدیقی اور علامہ طاہر اشرفی کو اسلامی نظریاتی کونسل کے اراکین منتخب ہونے پر دلی مبارکبا د پیش کی ہے اور ان کے حق میں دعائیں کی ہیں۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے اُمید ظاہر کی کہ ڈاکٹر فرید ہ احمد صدیقی اور علامہ طاہر اشرفی اسلامی نظریاتی کونسل میں پاکستان کو درپیش بحرانوں سے نکالنے کے لئے اپنا مثبت کردارادا کریں گے اور ملکی مفاد ا ت کو اولین ترجیح دیں گے ۔
 
ایم کیوایم یوکے کے کارکن عبدالحفیظ کے والد عبدالصمدکے انتقال کرگئے
عبدالحفیظ سے قائدتحریک الطا ف حسین اوررابطہ کمیٹی کااظہارتعزیت
لندن۔۔۔31،جنوری 2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے ایم کیوایم یوکے کے کارکن عبدالحفیظ کے والد عبدالصمدکے انتقال پر دلی تعزیت اورگہرے رنج وغم کا اظہار کیاہے۔اپنے بیان میں جناب الطاف حسین نے مرحوم کے تمام لواحقین سے تعزیت کرتے ہوئے کہاکہ میں اورتمام کارکنان آپ کے غم میں برابر کے شریک ہیں اوردعاگوہیں کہ اللہ تعالیٰ عبدالصمدمرحوم کی مغفرت فرمائے،انہیں جنت الفردوس میں جگہ دے اورتمام لواحقین کوصبرجمیل عطاکرے۔ 
دریں اثناء ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی نے بھی عبدالحفیظ سے ان کے والد کے انتقال پر شدیدافسوس کااظہارکیاہے اوردعاکی ہے کہ اللہ تعالیٰ عبدالصمدمرحوم کواپنی جواررحمت میں جگہ عطافرمائے اورلواحقین کویہ صدمہ برداشت کرنے کاحوصلہ عطاکرے ۔
 
ایم کیو ایم کے سوگوار کارکنان سے رابطہ کمیٹی کا اظہار تعزیت
کراچی:۔۔31،جنوری2013ء
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے ایم کیو ایم صوبائی تنظیمی کمیٹی پنجاب کے رکن ندیم راضی کے والد حسیب الرحمن، ایم کیو ایم قصبہ علی گڑھ سیکٹر یونٹ 125کے کارکن نعیم احمد غوری کے والد عبدالحمید غوری،عمران علی کے والد انور علی اور ایم کیو ایم کورنگی یونٹ 76کے کارکن شہزاد کی والدہ شاہجہاں بیگم کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے ۔ اپنے ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے مرحومین کے تمام سوگوار لواحقین سے دلی تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی کہ اللہ تعالی مرحومین کو اپنی جوار ر حمت میں جگہ اور لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ 
 
*****

12/4/2016 6:18:41 AM