Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

وفاقی حکومت کی جانب سے مردم شماری کے متنازعہ نتائج کوجاری کرنے کا فیصلہ کھلی کراچی دشمنی ہے۔طارق جاوید، اراکین رابطہ کمیٹی ایم کیوایم


وفاقی حکومت کی جانب سے مردم شماری کے متنازعہ نتائج کوجاری کرنے کا فیصلہ  کھلی کراچی دشمنی ہے۔طارق جاوید، اراکین رابطہ کمیٹی ایم کیوایم
 Posted on: 12/24/2020
وفاقی حکومت کی جانب سے مردم شماری کے متنازعہ نتائج کوجاری کرنے کا فیصلہ 
کھلی کراچی دشمنی ہے۔طارق جاوید، اراکین رابطہ کمیٹی ایم کیوایم
کراچی کی آبادی ہرلحاظ سے3 کروڑ سے زائد ہے لیکن مردم شماری میں کراچی کی
 اصل آبادی کوماضی کی طرح ایک بارپھر آدھا کردیاگیاہے
 کراچی کی آبادی کو سازش کے تحت آدھاکردکے اہل کراچی کوآباد ی کے تناسب 
سے ان کے نمائندگی کے حق اورتمام بنیادی حقوق سے محروم کیاجارہاہے 
کراچی دشمن فیصلہ واپس لیاجائے، جعلی مردم شماری کے نتائج کومنسوخ کیاجائے
کراچی میں اقوام متحدہ کی نگرانی میں آزادانہ اور منصفانہ مردم شماری کرائی جائے 
 ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے کنوینرطارق جاویداوراراکین رابطہ کمیٹی کامطالبہ 

لندن  …  24  دسمبر 2020ئ
ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے کنوینرطارق جاویداوراراکین رابطہ کمیٹی نے وفاقی حکومت کی جانب سے مردم شماری کے متنازعہ نتائج کوجاری کرنے کے فیصلے کی شدیدمذمت کرتے ہوئے اس فیصلے کوکھلی کراچی دشمنی قراردیاہے۔ اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہاکہ سندھ کے شہری علاقوں خصوصاًکراچی کے ساتھ ماضی میں بھی متعصبانہ رویہ اختیارکیاگیاہے اورکراچی دشمن ارباب اختیار کی طے شدہ پالیسی کے تحت بھٹودورحکومت میں بھی کراچی کی آبادی کوایک سازش کے تحت 

آدھاکرکے دکھایاگیا، اسی پالیسی کے تحت بعد میں ہونے والی مردم شماری میں بھی کراچی کی آبادی کوہمیشہ اس کی اصل آبادی سے کم کرکے دکھایاجاتارہاہے ۔ اسی کراچی دشمن پالیسی کے تحت کراچی کی اصل آبادی کے اعدادوشمارکومنظرعام پر آنے سے روکنے کے لئے 2011ء میں ہونے والی خانہ شماری کے نتائج کومنسوخ کردیاگیاتھا۔آج کراچی کی آبادی ہرلحاظ سے3 کروڑ سے زائد ہے لیکن اس مردم شماری میں بھی کراچی کی اصل آبادی کوماضی کی طرح ایک بارپھر آدھا کردیاگیاہے۔اس مردم شماری کے نتائج کوتمام غیرجانبدارادارے بھی مستردکرچکے ہیں لیکن موجودہ حکومت نے اس بوگس مردم شماری کے نتائج کوجاری کرنے کافیصلہ کیا ہے جوکسی بھی طرح قبول نہیں کیاجاسکتا۔ طارق جاویدا وراراکین رابطہ کمیٹی نے کہاکہ جعلی مردم شماری کے ذریعے کراچی کی آبادی کوجان بوجھ کرآدھاکرکے اہل کراچی کوآباد ی کے تناسب سے ان کے نمائندگی کے حق اورتمام بنیادی حقوق سے محروم کیاجارہاہے جوسراسرکراچی دشمنی ہے ۔ کنوینر طارق جاوید اوراراکین رابطہ کمیٹی نے مطالبہ کیاکہ یہ کراچی دشمن فیصلہ واپس لیاجائے، جعلی مردم شماری کے نتائج کومنسوخ کیاجائے اورکراچی میں اقوام متحدہ کی نگرانی میں آزادانہ اور منصفانہ مردم شماری کرائی جائے ۔ 

٭٭٭٭٭


1/21/2021 1:19:49 AM