Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

سپریم کورٹ کی جانب سے حکیم سعید قتل کیس میں ایم کیوایم کے کارکنوں کو بیگناہ قراردینا حق او رسچ کی فتح ہے ایم کیوایم رابطہ کمیٹی


سپریم کورٹ کی جانب سے حکیم سعید قتل کیس میں ایم کیوایم کے کارکنوں کو بیگناہ قراردینا حق او رسچ کی فتح ہے ایم کیوایم رابطہ کمیٹی
 Posted on: 4/26/2014
سپریم کورٹ کی جانب سے حکیم سعید قتل کیس میں ایم کیوایم کے کارکنوں کو بیگناہ قراردینا حق او رسچ کی فتح ہے ایم کیوایم رابطہ کمیٹی
سندھ ہائیکورٹ چندسال قبل ایم کیوایم کے کارکنوں کو حکیم سعید کیس میں پہلے ہی باعزت بری کرچکی تھی
 1998ءمیں حکیم سعید کے قتل کاالزام ایم کیوایم پر لگایاگیا،سندھ میں جمہوری حکومت کا تختہ الٹاگیااور گورنر راج لگا کر ایم کیوایم کے خلاف بدترین آپریشن کیا گیا
 اسی جھوٹے الزام کی بنیاد پربرسوں تک ایم کیوایم کا بدترین میڈیا ٹرائل بھی کیا گیا 
 سپریم کورٹ کے فیصلے نے ایک بارپھرثابت کردیاہے کہ حکیم سعیدقتل ایم کیوایم کے خلاف گہری سازش کاحصہ تھا
سپریم کورٹ کے اس فیصلہ پر اللہ کے حضورسر بسجود ہیں اور عوام و کارکنان کو اس تاریخ ساز فیصلہ پر دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں، رابطہ کمیٹی
 حکیم سعید قتل کیس کی آڑ میں ایم کیوایم کے جن بیگناہ کارکنوں کو شہید کیا گیا اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت فرمائے
کراچی ۔۔26،اپریل 2014ئ
متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے سپریم کورٹ کی جانب سے حکیم سعید قتل کیس میں ایم کیوایم کے کارکنوں کوباعزت بری کرنے کا فیصلہ برقرار رکھنے کے فیصلے کو حق او رسچ کی فتح قر ار دیا ہے ۔سندھ ہائیکورٹ چندسال قبل ایم کیوایم کے ان کارکنوںکو حکیم سعید کیس میں پہلے ہی باعزت بری کرچکی تھی۔ رابطہ کمیٹی نے کہا کہ 1998ءمیں ایک سازش کے تحت نہ صرف حکیم سعید کے قتل کا الزام ایم کیو ایم پر لگایا گیا بلکہ اس الزام کی بنیاد پر سندھ میں جمہوری حکومت کا تختہ الٹ کر یہاں گورنر راج لگا کر ایم کیوایم کے خلاف بدترین آپریشن بھی کیا گیا ۔ اس جھوٹے الزام میں ایم کیوایم کے ایک بیگناہ کارکن فصیح جگنو کو گرفتار کر کے حراست کے دوران وحشیانہ تشدد کا نشانہ بناکر ماورائے عدالت قتل بھی کیا گیا، اسی جھوٹے الزام کی بنیاد پربرسوں تک ایم کیوایم کا بدترین میڈیا ٹرائل بھی کیا گیا او ر اخبارات کے صفحے اسکے خلاف الزامات سے سیاہ کر دیئے گئے ۔ ایم کیوایم اس گھناﺅنے الزام کی مسلسل سختی سے تردید کرتی رہی ، یہ اللہ عزوجل کا کرم ہے کہ سندھ ہائی کورٹ کے بعد اب سپریم کورٹ نے بھی ایم کیوایم کو حکیم سعید قتل کیس سے باعزت بری کر دیا ہے جس پر ہم اللہ تعالیٰ کالاکھ لاکھ شکراداکرتے ہیں ۔رابطہ کمیٹی نے کہا کہ ایم کیوایم کے خلاف جھوٹے الزامات لگائے جانے کی تاریخ انتہائی طویل ہے 1992 ءمیں ایم کیوایم پر جناح پور بنانے کا الزام لگایا گیا بعد میں الزام لگانے والوں نے خود اعتراف کیا کہ ایم کیوایم پر الزام قطعی من گھڑت تھا، جناح پورکاالزام ایک ڈرامہ تھا اور ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت لگا یا گیا تھا ۔رابطہ کمیٹی نے کہاکہ سپریم کورٹ کے فیصلے نے ایک بارپھرثابت کردیاہے کہ حکیم سعیدقتل ایم کیوایم کے خلاف گہری سازش کاحصہ تھا۔رابطہ کمیٹی نے کہا کہ ہم عدلیہ کے اس فیصلہ پر اللہ کے حضور بسجود ہیں اور عوام اور کارکنان کو اس تاریخ ساز فیصلہ پر دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں ۔ رابطہ کمیٹی نے دعا کی کہ حکیم سعید قتل کیس کی آڑ میں ایم کیوایم کے جن بیگناہ کارکنوں کو شہید کیا گیا اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت فرمائے اور اس الزام کی آڑ میں ایم کیوایم کے کارکنان وہمدردوں پر مظالم کے پہاڑ توڑنے والوں کا احتساب کرے ۔(آمین )
٭٭٭٭٭



12/10/2016 10:31:59 AM