Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
pressoffice@mqm.org
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

ڈاکٹرریاض احمد پرغیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ تعصب اورعصبیت کی انتہاء ہے ، ندیم نصرت کنوینر متحدہ قومی موومنٹ


ڈاکٹرریاض احمد پرغیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ تعصب اورعصبیت کی انتہاء ہے ، ندیم نصرت کنوینر متحدہ قومی موومنٹ
 Posted on: 4/2/2017 1
ڈاکٹرریاض احمد پرغیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ تعصب اورعصبیت کی انتہاء ہے ، ندیم نصرت کنوینر متحدہ قومی موومنٹ
ڈاکٹرریاض احمد پر غیرقانونی اسلحہ رکھنے کا الزام من گھڑت ،جھوٹا، شرمناک اوربیہودہہے، ندیم نصرت
رینجرز کے اہلکارایم کیوایم ومہاجردشمنی میں اندھے ہوچکے ہیں اورانہیں اساتذہ کرام کی حرمت کا بھی پاس نہیں ہے، ندیم نصرت
جس ملک میں اساتذہ کو جھوٹے مقدمات میں قید کردیا جائے وہ ملک ’’ زندہ باد‘‘ کے
کھوکھلے نعرے لگانے سے قائم ودائم نہیں رہ سکتا، ندیم نصرت
پروفیسر ڈاکٹر ریاض احمد کے خلاف غیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ درج کرنے کا سنجیدگی سے نوٹس لیاجائے ،ندیم نصرت

متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان) کی رابطہ کمیٹی کے کنوینر ندیم نصرت نے جامعہ کراچی کے پروفیسر ڈاکٹرریاض احمد پر غیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ درج کرنے کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور اس عمل کو تعصب اورعصبیت کی انتہاء قراردیا ہے ۔ ایک بیان میں ندیم نصرت نے کہاکہ معروف فلاسفر، دانشور اور جامعہ کراچی کے ریٹائرڈپروفیسر ڈاکٹرحسن ظفرعارف کو بابائے مہاجرقوم قائد تحریک جناب الطاف حسین سے وابستگی کی پاداش میں سندھ رینجرز نے کراچی پریس کلب کے باہر سے بلاجواز گرفتارکیاتھا اور وہ ضعیف العمری اور شدیدعلالت کے باوجود گزشتہ ساڑھے پانچ ماہ سے قیدوبند کی صعوبتیں برداشت کررہے ہیں ۔ جامعہ کراچی کے پروفیسر ڈاکٹرریاض احمد دیگر اساتذہ کے ہمراہ کراچی پریس کلب میں پروفیسر حسن ظفرعارف کی علالت اورغیرقانونی گرفتاری کے حوالہ سے پریس کانفرنس کرنا چاہتے تھے لیکن ڈاکٹرریاض احمد کو دوخواتین پروفیسر زکے ہمراہ گرفتارکرکے لاپتہ کردیاگیا تھا اورآج رینجرز کی مدعیت میں ڈاکٹرریاض احمد پر غیرقانونی اسلحہ رکھنے کا من گھڑت ،جھوٹا، شرمناک اوربیہودہ الزام لگاکران کے خلاف مقدمہ در ج کرلیاگیا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ ندیم نصرت نے کہاکہ رینجرز کے متعصب اہلکار ایم کیوایم ومہاجر دشمنی میں اندھے ہوچکے ہیں اورانہیں اساتذہ کرام کی حرمت کا بھی پاس نہیں ہے ۔ ایک جانب کالعدم جہادی اورفرقہ پرست تنظیموں کوملک بھرمیں جلسہ کرنے ، جلوس نکالنے اوررینجرز کی موجودگی میں چندہ جمع کرنے کی کھلی آزادی ہے جبکہ اعلیٰ تعلیم یافتہ پروفیسرز، ڈاکٹرز اوراساتذہ کرام کو پریس کانفرنس تک کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے اورانہیں گرفتارکرکے جھوٹے مقدمات میں ملوث کیاجارہا ہے ۔ندیم نصرت نے کہاکہ جس ملک میں جاہل دہشت گردوں کی سرپرستی کرکے جہالت کو عام کیا جائے اور طالبعلموں کو علم وشعور کی روشنی سے منور کرنے والے اساتذہ کو گرفتارکرکے جھوٹے مقدمات میں قید کردیا جائے وہ ملک’’ زندہ باد‘‘ کے کھوکھلے نعرے لگانے سے قائم ودائم نہیں رہ سکتا ۔ ندیم نصرت نے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نوا زشریف سے مطالبہ کیاکہ جامعہ کراچی کے پروفیسر ڈاکٹر ریاض احمد کے خلاف غیرقانونی اسلحہ رکھنے کا مقدمہ درج کرنے کا سنجیدگی سے نوٹس لیاجائے ، اس کے ذمہ دار رینجرز اہلکاروں کے خلاف سخت ترین قانونی کارروائی کی جائے اور تمام گرفتارشدگان کو فی الفور رہا کیاجائے ۔

*****

6/28/2017 9:19:01 PM