Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

’’مائنس ون ‘‘ کے بارے میں بلاول بھٹوزرداری کے خیالات کاخیرمقدم کرتے ہیں۔ ندیم نصرت کنوینر ایم کیوایم


’’مائنس ون ‘‘ کے بارے میں بلاول بھٹوزرداری کے خیالات کاخیرمقدم کرتے ہیں۔ ندیم نصرت کنوینر ایم کیوایم
 Posted on: 10/7/2016
قائدتحریک الطاف حسین کے بارے میں بلاول بھٹوزرداری کے خیالات نہایت مثبت اورحقیقت پسندانہ ہیں۔ ندیم نصرت 
جوسیاسی قائدین عوام میں روٹس رکھتے ہیں انہیں ظلم وجبر، سازشوں اورپروپیگنڈوں کے ذریعے سیاسی منظرسے مائنس نہیں کیاجاسکتا
اسٹیبلشمنٹ کے وہ عناصرجو مائنس ون کی پالیسی پر یقین رکھتے ہیں انہیں بھی پاکستان کے وسیع ترمفادمیں اپنی پالیسی پر نظرثانی کرناچاہیے
کسی بھی معاملے کواپنی ذاتی انا کامسئلہ نہیں بناناچاہیے، سیاسی حقیقتوں کوتسلیم کرناچاہیے۔ندیم نصرت
اختلاف کی بنیاد پر قائدتحریک الطاف حسین یاکسی بھی عوامی شخصیت کوسیاسی منظرنامے سے ہٹانے کی کوشش مناسب نہیں 
معاملات کوحل کرنے کیلئے بات چیت کی راہ اپنانی چاہیے ،دنیا میں مسائل کے حل کیلئے بات چیت سے بہترکوئی راستہ نہیں۔ندیم نصرت

متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینرندیم نصرت نے ’’مائنس ون ‘‘ کے بارے میں پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرپرسن بلاول بھٹوزرداری کے بیان کاخیرمقدم کیاہے ۔ اپنے بیان میں ندیم نصرت نے کہاکہ بلاول بھٹوزرداری نے آج مائنس ون کی باتوں اورقائدتحریک جناب الطاف حسین کے بارے میں جن خیالات کا اظہار کیا ہے وہ نہایت مثبت اورحقیقت پسندانہ ہیں اورہم ان خیالات کاخیرمقدم کرتے ہیں۔ ندیم نصرت نے کہاکہ جوسچے جمہوریت پسندہیں وہ اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ جوسیاسی قائدین عوام میں روٹس رکھتے ہیں،جن کی جماعتیں تمام ترمخالفتوں، سازشوں اورپروپیگنڈوں کے باوجود بارباعوام کامینڈیٹ حاصل کرتی ہیں انہیں ظلم وجبر، سازشوں اورپروپیگنڈوں کے ذریعے سیاسی منظرسے مائنس نہیں کیاجاسکتا، انہیں عوام کے دلوں سے نکالانہیں جاسکتا۔ندیم نصرت نے کہاکہ اسٹیبلشمنٹ کے وہ عناصرجوآج بھی مائنس ون کی پالیسی پر یقین رکھتے ہیں انہیں بھی کسی بھی معاملے کواپنی ذاتی انا کامسئلہ نہیں بناناچاہیے، انہیں پاکستان کے وسیع ترمفادمیں اپنی پالیسی پر نظرثانی کرناچاہیے،سیاسی حقیقتوں کوتسلیم کرناچاہیے اوراختلاف کی بنیاد پر قائدتحریک الطاف حسین یاکسی بھی عوامی شخصیت کوسیاسی منظرنامے سے ہٹانے کی کوشش کرنے کے بجائے معاملات کوبات چیت کے ذریعے حل کرنے کی راہ اپنانی چاہیے کیونکہ دنیامیں مسائل کوحل کرنے کیلئے بات چیت سے بہترکوئی راستہ نہیں۔ 

*****

12/6/2016 10:00:38 AM