Altaf Hussain  English News  Urdu News  Sindhi News  Photo Gallery
International Media Inquiries
+44 20 3371 1290
+1 909 273 6068
[email protected]
 
 Events  Blogs  Fikri Nishist  Study Circle  Songs  Videos Gallery
 Manifesto 2013  Philosophy  Poetry  Online Units  Media Corner  RAIDS/ARRESTS
 About MQM  Social Media  Pakistan Maps  Education  Links  Poll
 Web TV  Feedback  KKF  Contact Us        

کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں بجلی کا سنگین بریک ڈاؤن کسی دہشت گردی کا سبب بن سکتا تھا ، ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی


کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں بجلی کا سنگین بریک ڈاؤن کسی دہشت گردی کا سبب بن سکتا تھا ، ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی
 Posted on: 1/25/2015
کراچی سمیت ملک کے مختلف شہروں میں بجلی کا سنگین بریک ڈاؤن کسی دہشت گردی کا سبب بن سکتا تھا ، ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی
 
بریک ڈاؤن کے سبب کراچی کا تاریکی میں ڈوب جانا K ۔ الیکٹرک انتظامیہ کی نااہلی و کراچی دشمنی کا منہ بولتا ثبوت ہے
K ۔ الیکٹرک کے پاس اپنی 1800میگا واٹ بجلی کی انسٹالڈ پیداوارہے اور یہ ادارہ واپڈا سے 650میگا واٹ بجلی بھی لیتا ہے 
کے ۔ الیکٹرک مختلف نجی اداروں سے بھی بجلی لیکر شہر کے عوام کو فراہم کرتاہے، رابطہ کمیٹی 
بریک ڈاؤن کے باعث واپڈا سے ملنے والے 450میگا واٹ کی فراہمی بند ہونے پر مکمل کراچی کا تاریکی میں ڈوب جانا سمجھ سے بالاتر ہے
K ۔ الیکٹرک نے واپڈا سے ملنے والی بجلی کو پرائمری حیثیت دے رکھی ہے جبکہ اپنے 1800میگا واٹ کی فراہمی کا سسٹم سیکنڈری سطح پر رکھا ہوا ہے
K۔ الیکٹرک عوام سے بجلی کے بل بھی نیپرا ٹیرف کے مطابق فرنس آئل کی قیمتوں کے حساب سے لے رہی ہے اور
اپنے اکثریتی پلانٹس کو گیس کے ذریعہ چلا رہی ہے
5سالہ معاہدے کے باوجودK ۔ا لیکٹر ک کراچی کو اس کی ضرورت کے مطابق بجلی فراہم کرنے کے قابل نہیں بن سکی ہے،رابطہ کمیٹی
وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اوروفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کراچی کو بھی پاکستان کا حصہ سمجھیں، رابطہ کمیٹی
کراچی کے عوام کے ساتھ K۔ الیکٹرک کے متعصبانہ طرز عمل کا فوری نوٹس لیکر شہر میں بجلی کے بحران کا خاتمہ کروائیں
کراچی الیکٹرک کارپوریشن میں موجود کراچی دشمن انتظامیہ اور افسران کے خلاف کار روائی کریں، رابطہ کمیٹی کا حکومت سے مطالبہ 
کراچی۔۔۔۔25جنوری2015ء
متحد ہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے گزشتہ رات مظفر گڑھ تھرمل پاور پلانٹ اور نیشنل گرڈ اسٹیشن کی لائن ٹرپ ہونے کے سبب کراچی سمیت ملک کے مختلف حصوں میں ایک مرتبہ پھربجلی کے سنگین بریک ڈاؤن پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ ملک میں امن و امان کی موجودہ صورتحال میں اس نوعیت کا بریک ڈاؤن کسی بھی دہشت گردی کا سبب بن سکتا تھا ۔ رابطہ کمیٹی نے کہا کہ بریک ڈاؤن کے سبب کراچی شہر کا تاریکی میں ڈوب جاناانتہائی افسوسنا ک اور کے ۔ الیکٹرک انتظامیہ کی نااہلی و کراچی دشمنی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔انہوں نے کہاکہ کے ۔ الیکٹرک کے پاس ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی کو بجلی فراہم کرنے کیلئے خود اپنی 1800میگا واٹ بجلی کی انسٹالڈ پیداوارہے اور ایک معاہدے کے تحت کے ۔ الیکٹرک واپڈا سے 650میگا واٹ بجلی بھی لیتا ہے جبکہ سردیوں میں یہ پیداوار صرف450میگا واٹ کردی جاتی ہے اور اس کے ساتھ کے ۔ الیکٹرک مختلف نجی اداروں سے بھی بجلی لیکر شہر کے عوام کو فراہم کرتاہے لیکن گزشتہ رات بریک ڈاؤن کی وجہ سے کے ۔ الیکٹرک کو واپڈا کی جانب سے ملنے والے 450میگا واٹ کی فراہمی بند ہونے کے سبب مکمل کراچی کا تاریکی میں ڈوب جانا سمجھ سے بالاتر ، اپنے فرائض سے غفلت اورکراچی کے شہریوں سے کھلا تعصب ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کے ۔الیکٹرک انتظامیہ نے کراچی جیسے بڑے شہر کو بجلی فراہم رنے کیلئے واپڈا سے ملنے والی  ؍ K-Electric بجلی کو پرائمری حیثیت دے رکھی ہے۔انہوں نے کہاکہ اپنے 1800میگا واٹ بجلی کی فراہمی کے سسٹم کو سیکنڈری سطح پر رکھا ہوا ہے جس کے سبب شہر کے عوام بجلی کی بدترین لوڈ شیڈنگ کے عذاب میں مبتلا ہیں جبکہ کے ۔ الیکٹرک عوام سے بجلی کے بلوں کی قیمتیں بھی نیپرا ٹیرف کے مطابق فرنس آئل کی قیمتوں کے حساب سے لے رہی ہے اوراپنے اکثریتی پلانٹس کو گیس کے ذریعہ چلا رہی ہے جس کی وجہ سے کے۔الیکٹرک مختلف وقتوں میں گیس کی فراہمی کو جواز بنا کر شہر میں بجلی کی آنکھ مچولی کا کھیل کھیلتی رہتی ہے حالانکہ کے۔ الیکٹرک کو گورنمنٹ کی جانب سے تقریباً ساڑھے 12ارب روپے سالانہ کی سبسڈی بھی دی جاتی ہے لیکن یہ ا دارہ کراچی کے عوام کوسہولتیں فراہم کرنے میں کوئی کردار ادا نہیں کررہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 5سال قبل کے ۔ الیکٹرک اور واپڈا کے درمیان ہونیوالے معاہدے کے وقت کے ۔ الیکٹرک انتظامیہ نے حکومت کو یقین دلایا تھا کہ 5سال کے اندر کے ۔ لیکٹر ک خود کراچی کو اس کی ضرورت کے مطابق بجلی فراہم کرنے کے قابل ہوجائیگا لیکن آ ج تک ایسا نہیں کیا گیا جبکہ آج رات یہ معاہد ہ بھی اپنی مدت پوری کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس تمام تر صورتحال سے ہم بذریعہ میڈیاوفاقی حکومت اور کے ۔ الیکٹرک انتظامیہ کو آگاہ کرتے رہے ہیں لیکن ایسا لگتا ہے جیسے سب نے اپنی آنکھوں پر کراچی دشمنی کی عینک لگائی ہوئی ہے اور کوئی کراچی کے ساتھ انصاف کرنے کو تیار نہیں ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اوروفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف سے مطالبہ کیا کہ وہ کراچی کو بھی پاکستان کا حصہ سمجھتے ہوئے یہاں کے عوام کے ساتھ کے ۔ ا لیکٹر ک کے متعصبانہ طرز عمل کا فوری نوٹس لیکر شہر میں بجلی کے بحران کا خاتمہ کروائیں اور کراچی الیکٹرک کارپوریشن میں موجود کراچی دشمن انتظامیہ اور افسران کے خلاف کار روائی کریں ۔
English Viewers


12/3/2016 12:47:29 AM